لوک سبھا الیکشن:این ڈی اے میں آدھادرجن سیٹوں پرپھنس گیاپیچ،کوئی پیچھے ہٹنے کوتیارنہیں

Share Article
modi-nitish
این ڈی اے میں اس وقت سب فیل گڈ(Feel Good)جیسا محسوس ضرورہورہاہے، لیکن اندرحالت ٹھیک نہیں ہے۔شامل اتحادی پارٹیوں کی حالت پیچھے کنواں آگے کھائی ہے۔ان دنوں این ڈی اے میں اتحادی جماعتوں کے ساتھ مل کر سیٹوں کاانتخاب فائنل راؤنڈ میں ہے۔لیکن کچھ سیٹوں پرپیچ بری طرح پھنس گیاہے۔ ان سیٹوں کی تعداد ایک درجن سے زیادہ ہیں۔ جن پرتینوں پارٹیاں اپنا اپنا دعویٰ ٹھوک رہی ہیں۔ ایسے میں یہ اب تک طے نہیں ہوپایاہے کہ یہ معاملہ سلجھے گا کیسے؟
ذرائع کی مانیں ،بہارکی 40لوک سبھا سیٹوں میں سے 30پرتصویرصاف ہے۔کچھ سیٹیں ایسی ہیں جن پربناماتھاپچّی کے ایڈجسٹمنٹ کی تیاری ہے۔لیکن درجن بھرسیٹیں ایسی ہیں، جن پراب تک یہ طے نہیں ہوسکاہے کہ وہ کس کے حصے میں آئیں گی۔این ڈی اے میں شامل پارٹیوں کے بیچ سیٹیوں کی تقسیم میں جے ڈی یو-بی جے پی کو17-17تو ایل جے پی کو6سیٹیں ملنی ہیں۔
اس میں شامل اتحادی پارٹیاں ابھی بھی سیٹوں کے انتخاب میں اپنی اپنی روایتی سیٹوں پر امیدوار اتارنے کی پالیسی پر کام کر رہی ہیں۔مگرپریشانی یہ ہے کہ سال2014میں جے ڈی یو این ڈی اے میں نہیں تھا تو2009میں ایل جے پی این ڈی اے کا حصہ نہیں تھا ۔ایسے میں یہ طے نہیں ہوپارہاہے کہ کس کا دعویٰ مضبوط ہے۔
ان سیٹوں پرپھنسا ہے پیچ
جے ڈی یو نے این ڈی اے میں شامل ہوتے ہی راجدھانی پٹنہ کی دوسیٹوں میں سے ایک پردعویٰ ٹھوک چکی ہے۔ لیکن دقت یہ ہے کہ دونوں سیٹیوں پربی جے پی کے ٹکٹ پرہی لڑنے والے جیتے ہیں۔پٹنہ صاحب اورپاٹلی پوتر میں سے کوئی ایک جے ڈی یو لینا چاہ رہاہے اوربی جے پی دینے کوتیارنہیں ہے۔تووہیں سمستی پور ابھی ایل جے پی کے کوٹے میں ہے لیکن جے ڈی یوکوٹے ایک وزیربھی یہاں تال ٹھوک رہے ہیں۔موتیہاری میں مرکزی وزیر رادھاموہن سنگھ ہیں مگراسی سیٹ جے ڈی یوبھی فیلڈنگ کررہے ہیں۔مونگیرکے بدلے ایل جے پی کو بیگوسرائے یا نوادہ ملے گا۔
نشستوں کی ممکنہ صورتحال
بی جے پی
پٹنہ صاحب، آرا، بکسر، سیوان ، سارن، مظفرپور، شیوہر، اجیارپور، مدھوبنی ، کٹیہار، گیا، بھاگلپور اورگوپال گنج۔
جے ڈی یو
نالندہ ، کاراکاٹ، مہاراج گنج، سپول، مدھے پورہ ، دربھنگہ، جہان آباد، مونگیر، بانکا، پورنیہ، ساسارام، والمیکی نگر، سیتامڑھی۔
ایل جے پی
حاجی پور، جموئی، ویشالی وسمستی پور۔
اس پرغور
نوادہ، بیگوسرائے، موتیہاری، کشن گنج، ارریہ ، کھگڑیا، جھنجھارپور، بیتیا، پاٹلی پوتر اوراورنگ آباد
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *