کانگریس -آپ میں اتحادہوگایانہیں؟منیش سسودیانے کیا صاف

Share Article

aap

ملک میں انتخابی ماحول گرم ہے ۔کسی ریاست میں سیاسی پارٹیوں کے بیچ اتحادہوگیاہے اورکئی ریاست میں ابھی ابھی اتحادپربات چل رہی ہے۔انہی میں سے ایک دہلی بھی ہے۔یعنی سیاسی اتحادکی گہماگہمی جاری ہے۔لیکن لوک سبھا انتخابات 2019 کے پیش نظر عام آدمی پارٹی ’آپ‘اور کانگریس کے درمیان اتحادہو گا یا نہیں ؟،اس پر ہفتہ کو منیش سسودیا نے پردہ اٹھاتے ہوئے صاف کر دیا ہے کہ انہوں نے تو بہت کوشش کی ،کئی فارمولے کانگریس کے سامنے رکھے لیکن کانگریس تیار نہیں ہوئی۔
سسودیا نے صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کانگریس کے کرپشن کے خلاف لڑتے ہوئے اقتدار میں آئے۔ اب ہم کانگریس کا ساتھ اس لیے چاہتے ہیں تاکہ فرقہ وارانہ طاقتیں ملک کو توڑ نہ سکیں۔ اسی کے چلتے ہم دہلی، گوا، ہریانہ، چندی گڑھ اور پنجاب میں کانگریس سے اتحاد چاہتے تھے۔ اس کیلئے ہم نے کانگریس سے بات کی، ہریانہ میں جے جے پی سے بات کی۔

عام آدمی پارٹی نے اتحاد کو لے کر کانگریس پراعدادوشمار کا الزام لگایا ہے۔ دہلی کی حکمراں ’آپ‘کا کہنا ہے کہ وہ ملک کو مودی -شاہ کی جوڑی سے بچانے میں لگے ہیں جبکہ کانگریس اعدادوشمار میں پھنسی ہے۔’آپ ‘نے پنجاب کے بعد ہریانہ میں بھی اتحاد کے لئے کانگریس کی’ نہ‘ کے بعد صرف دہلی میں اتحاد کے امکان سے انکار کر دیا ہے۔
دہلی کے نائب وزیر اعلی اور آپ لیڈر منیش سسودیا نے ہفتہ کو کہا، ’’کانگریس نے کل رات ہریانہ میں بھی آپ کے ساتھ اتحاد سے انکار کر دیا ہے، ایسے میں صرف دہلی میں کانگریس سے اتحاد کیلئے آپ تیار نہیں ہے‘‘۔

گوا اور پنجاب میں انہوں نے اتحاد سے انکار کر دیا۔ دہلی میں کانگریس کا ایک بھی ایم ایل اے نہیں ہے۔وہ گزشتہ انتخابات میں بھی بہت کم ووٹ حاصل کر سکے تھے۔ اگر ہم دونوں ساتھ آتے ہیں تو بی جے پی کو ہرا سکتے ہیں۔ نریندر مودی اور امت شاہ کی جوڑی کو دوبارہ اقتدار میں آنے سے روک سکتے ہیں۔

سنجے سنگھ نے کہاکہ ’’دہلی میں کانگریس کی ایک بھی سیٹ نہیں ہے پھر بھی 3 سیٹ مانگ رہی۔پنجاب میں ہمارے 4 اراکین پارلیمنٹ اور 20 ایم ایل اے ہیں اور پھر بھی ہمیں ایک بھی سیٹ نہیں دے رہے‘‘۔ اتحاد میں ہمارا مقصد صرف سیٹوں کی تقسیم نہیں، 18 سیٹوں پر مودی -شاہ کی جوڑی کو نیچے لانے کا ہے۔

 

 

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *