انتخابی اخراجات میں یو ایس کو پیچھے چھوڑ کر نمبر ۔1 بن جائے گا بھارت

Share Article

lok-sabha-2019

الیکشن کمیشن لوک سبھا انتخابات 2019 کی تاریخوں کا اعلان کردیا ہے، لوک سبھا انتخابات کے ساتھ ہی آندھرا پردیش، اروناچل پردیش، اڈیشہ اور سکم اسمبلی انتخابات کا اعلان بھی ہوگیا۔ بتا دیں کہ ایک اندازے کے مطابق یہ عام انتخابات دنیا کا سب سے مہنگا انتخابات ثابت ہونے جا رہا ہے۔

’کارنی ایڈومیٹ فار انٹرنیشنل پیس تھینک ٹینک میں سینئر فیلو اور جنوبی ایشیا پروگرام کے ڈائریکٹر ملن وشنو کے مطابق 2016 کے امریکی صدارتی انتخابات اور کانگریس انتخابات میں 46,211 کروڑ روپے (650 ملین ڈالر) خرچ ہوئے تھے۔ وشنو کے مطابق اگر بھارت میں 2014 میں ہوئے لوک سبھا انتخابات میں 35,547 کروڑ روپے (500کروڑ ڈالر )خرچ ہوئے تھے۔ تو 2019کے انتخابات میں امریکی الیکشن میں خرچ کی اعداد وشمار آسانی پار ہوسکتا ہے۔ ایسا ہوا تو یہ دنیا کا سب سے مہنگا الیکشن ہوگا۔
سینٹر فار میڈیا اسٹیڈیز نے اپنے سروے میں کرناٹک انتخابات ’دولت پینے والا ‘‘بتایا تھا۔ سی ایم ایس کے مطابق مختلف سیاسی پارٹیوں اور ان کے امیدواروں کے ذریعہ کرناٹک انتخابات میں 9,500 سے 10,500 کروڑ روپے کے درمیان فنڈز خرچ کیا گیا۔ یہ خرچ ریاست میں منعقد گزشتہ اسمبلی انتخابات کے اخراجات سے دوگنا ہے۔ سروے میں بتایا گیا کہ اس میں وزیر اعظم کی مہم میں ہوا خرچ شامل نہیں ہے۔

سی ایم ایس کے مطابق کرناٹک،آندھرا پردیش اور تمل ناڈو ملک میں اسمبلی انتخابات میں خرچ کے معاملے میں سب سے آگے ہیں۔ سی ایم ایس کے این بھاسکر راؤ کے مطابق خرچ کی شرح اگر یہی رہی تو 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں 50,000 سے 60,000 کروڑ روپے خرچ ہونے کا اندازہ ہے۔ گزشتہ لوک سبھا انتخابات میں 35,000 کروڑ روپیہ خرچ ہوا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *