لوک سبھا انتخابات:آخری مرحلے کیلئے بہارکی 8سیٹوں پرپولنگ

Share Article

nitish-kumar

پٹنہ: لوک سبھا انتخابات کے ساتویں اور آخری مرحلے میں اتوار کو سات ریاستوں اور ایک مرکز ی حکومت کے زیر انتظام علاقہ کے 59 سیٹوں پر ووٹنگ ہورہی ہے۔آخری مرحلے میں آج ہماچل پردیش کی چار، اترپردیش کی 13، بہار کی 8، پنجاب کی 13، چنڈی گڑھ کی ایک، مدھیہ پردیش کی 8، جھارکھنڈ کی تین اور مغربی بنگال کی نو سیٹیوں پر ووٹنگ ہورہی ہے۔

بہار کی 40 میں سے 8 لوک سبھا سیٹوں پرآج (اتوار) ساتویں مرحلے کیتحت ووٹنگ ہورہی۔ اس مرحلے میں پٹنہ صاحب، پاٹلی پتر، آرا، نالندہ، بکسر، سہسرام، کاراکاٹ اور جہان آباد لوک سبھا سیٹ شامل ہیں۔مذکورہ سیٹوں پر ووٹنگ صبح سات بجے سے ہورہی۔ چیف الیکشن افسر ایچ ایس سرینواس کے مطابق اس مرحلے میں کل 157 امیدوار انتخابی میدان میں ہیں جن میں 137 مرد اور 20 خواتین شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ نالندہ لوک سبھا علاقے میں سب سے زیادہ 35 امیدوار انتخابی میدان میں ہیں جبکہ آرا میں سب سے کم 11 امیدوار میدان میں ہیں۔کاراکاٹ لوک سبھا علاقے میں 27 امیدوار اپنی قسمت آزما رہے ہیں، پاٹلی پتر میں 25، پٹنہ صاحب میں 18 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ آج ہونا ہے۔ اس مرحلے میں این ڈی اے اور مہاگٹھ بندھن دونوں کے امیدوار میدان میں ہیں جن میں بی جے پی کے 5، جنتادل (یو)، آر جے ڈی کے 3 -3، کانگریس کا 2، آر ایل ایس پی کا ایک امیدوار میدان میں ہے۔

اس کے علاوہ شیو سینا کے 3 امیدوار، بی ایس پی کا 7، ہم، این سی پی، وی آئی پی اور سی پی آئی مالے نے بھی 1 -1 امیدوار انتخابی میدان میں اتارا ہیں۔ بی ایس پی کے سات امیدواروں کے علاوہ قومی سمتا پارٹی کے امیدوار اور جہان آباد سے ممبر پارلیمنٹ ارون کمار بھی اکیلے دم پر اپنی قسمت آزما رہے ہیں۔ ساتویں مرحلے میں 8038007 مرد، 7153924 خواتین اور 501 تیسری صنفی سمیت کل 15192432 ووٹر 15811 پولنگ مراکز پر اپنے ووٹ کا حق استعمال کریں گے جس میں 60176 سروس ووٹرس ہیں۔ کل پولنگ مراکز میں سے نالندہ میں 2248 پولنگ اسٹیشن بنائے گئے ہیں۔ پٹنہ صاحب میں 2007، پاٹلی پتر میں 2050،آرا میں 2162، بکسر میں 1856، ساسارا م میں 1927، کاراکاٹ میں 1869، جہان آباد میں 1692 پولنگ اسٹیشن ہیں۔ الیکشن کمیشن نے 15811، وی وی پیٹ اور 26233 بیلیٹ یونٹ کا اہتمام کیا ہے۔

 

 

آخری مرحلے کے انتخابات میں چار مرکزی وزراء روی شنکر پرساد، آر کے سنگھ، اشونی کمار چوبے اور رام کرپال یادو کی ساکھ داؤ پر لگا ہے۔ بی جے پی کی جانب سے پٹنہ صاحب میں روی شنکر پرساد، پاٹلی پتر میں رام کرپال یادو، بکسر میں اشونی کمار چوبے اورآرا میں آر کے سنگھ میدان میں ہیں۔ اس مرحلے میں سب کی نگاہیں پٹنہ صاحب کے انتخابات پر ٹکی ہوئی ہیں جہاں راجیہ سبھا رکن روی شنکر پرساد کا سامنا ان کے پرانے ساتھی اور اس علاقے کے بی جے پی کے رہنما کے طور پر دو – دو بار پارلیمنٹ میں نمائندگی کر چکے شتروگھن سنہا عرف بہاری بابو سے ہو رہا ہے۔ یہاں دونوں کے درمیان کانٹے کی ٹکر ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *