حزب المجاہدین کے تین دہشت گردوں پر کشتواڑ پولیس نے رکھا 30 لاکھ کا نقد انعام

Share Article

 

۔ حزب المجاہدین سے منسلک تینوں دہشت گرد وادی میں ہوئے کئی حملوں میں ملوث رہے
۔ پولیس نے پوسٹر جاری کرکے اطلاع دینے والے کا نام خفیہ رکھے جانے کا بھروسہ دیا

جموں کے ڈوڈہ اور کشتواڑ میں دہشت گردی کو جڑ سے مٹانے کے لئے کشتواڑ کی ضلع پولیس نے دہشت گرد تنظیم حزب المجاہدین سے وابستہ تین دہشت گردوں پر 30 لاکھ روپے کے نقد انعام کا اعلان کیا ہے۔ ان دہشت گردوں میں محمد امین بٹ عرف جہانگیر سروری پر 15 لاکھ، ریاض احمد اور مدثر حسین پر ساڑھے سات سات لاکھ روپے کا انعام رکھا گیا ہے۔ اس سے پہلے حزب المجاہدین کے ہی دہشت گرد ہارون وانی کو زندہ یا مردہ پکڑنے کے لئے ڈوڈہ پولیس نے 15 لاکھ روپے کے انعام کا اعلان کیا تھا۔

یہ تینوں دہشت گرد وادی میں ہوئے کئی حملوں میں ملوث رہے ہیں۔ تینوں حزب المجاہدین سے وابستہ بتائے جاتے ہیں۔ وادی میں دہشت گردوں کے خلاف فوج کی مہم جاری ہے۔ فوج کے اعلیٰ ذرائع نے گزشتہ ہفتے دعویٰ کیا تھا کہ وادی میں انصارغزوۃ الہنددہشت گرد تنظیم کا خاتمہ ہو گیا ہے۔ اس دہشت گرد تنظیم کا سربراہ ذاکر موسیٰ تھا، جس کی موت کے بعد عبدالحمید للہاری نے کمان سنبھال لی تھی لیکن سیکورٹی فورسز نے گزشتہ ہفتے منگل کے روز عبدالحمید للہاری کو بھی مار گرایا ۔

کشتواڑ کے ایس ایس پی ڈاکٹر ہرمیت سنگھ مہتا نے بتایا کہ تینوں دہشت گردوں کو زندہ یا مردہ پکڑنے کے لئے 30 لاکھ روپے کا انعام کا اعلان کیا گیا ہے۔ پولیس نے حزب کے ان تینوں دہشت گردوں کے پوسٹر بھی جاری کئے ہیں۔ پولیس نے پوسٹر کے ذریعے لوگوں کو یقین دلایا ہے کہ دہشت گردوں کی اطلاع دینے والے شخص کا نام خفیہ رکھا جائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *