کشمیر: کولگام میں 2 دہشت گرد ہلاک، فوج کے ساتھ تصادم جاری

Share Article

ایک فروری کو بھی پلوامہ کے ایک گاؤں میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ دہشت گردوں کی تصادم ہوئی تھی جس میں جیش محمد (جےای ایم) کے دو دہشت گرد مارے گئے۔

 

جنوبی کشمیر کے کولگام ضلع میں دہشت گردوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان تصادم جاری ہے۔ اب تک کی کارروائی میں دو دہشت گرد مار گرائے گئے ہیں۔ كیلم گاؤں میں چھپے دہشت گردوں کو فوج کے جوانوں نے چاروں طرف سے گھیر رکھا ہے۔ دونوں جانب سے مسلسل فائرنگ چل رہی ہے۔ دہشت گرد اس گاؤں میں کب گھسے، فی الحال اس کی معلومات نہیں مل پائی ہے۔

گزشتہ رات سیکورٹی فورسز کو كیلم گاؤں میں کچھ مشتبہ افراد کی سرگرمیوں کے بارے میں اطلاع ملی۔ ان پٹ کی بنیاد پر فوج کے جوانوں نے پورے گاؤں کو چاروں طرف سے گھیر لیا اور بڑے پیمانے پر تفتیش شروع کی۔ تلاشی مہم سے بوکھلائے دہشت گردوں نے فوج پر فائرنگ شروع کر دی۔فوج نے بھی اس کا منہ توڑ جواب دیا اور فی الحال دونوں طرف سے مسلسل فائرنگ کی خبریں آرہی ہیں۔ اب تک کیمعلومات کے مطابق گاؤں میں 3-4 دہشت گرد چھپے ہوئے تھے جن میں دو کے مارے جانے کی خبر ہے۔
پلوامہ میں بدھ کو بھی سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان تصادم ہوا تھا۔ پولیس کے مطابق لتر علاقے کے چكورا گاؤں میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملی تھی۔اس کے بعد سیکورٹی فورسز نے علاقے کو چاروں طرف سے گھیر لیا اور تلاش مہم شروع کی۔ پولیس کے افسر نے بتایا، “جیسے ہی چھپا دہشت گردوں کے گرد حلقوں کو سخت کیا گیا تو انہوں نے سیکورٹی فورسز پر گولیاں چلائی، جس کے بعد تصادم شروع ہو گئی۔” تصادم والی جگہ سے کچھ فاصلے پر مظاہرین اور سکیورٹی کے درمیان بھی مقابلہ ہو گئی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *