کرناٹک: سابق اسپیکر اور کانگریس لیڈر کی رہائش گاہ پر انکم ٹیکس کاچھاپہ

Share Article

 

ضمنی انتخابات میں رانی بنور سیٹ سے کانگریس امیدوار ہیں سابق اسپیکر کے بی کولی واڑ
چھاپے میں انکم ٹیکس حکام کو کچھ نہیں ملا، کانگریس کارکنان کا مظاہرہ

انکم ٹیکس اور آبکاری محکمہ کے حکام نے رانی بنور اسمبلی سیٹ کے ضمنی انتخابات میں کانگریس امیدوار اور کرناٹک اسمبلی کے سابق اسپیکر کے بی کولی واڑ کے گھر پر منگل کی رات چھاپے مارے۔ محکمہ انکم ٹیکس کے مطابق نقد رقم اور شراب کی ذخیرہ اندوزی کی شکایت کے بعد یہ چھاپے مارے گئے لیکن کچھ بھی برآمد نہیں ہوا ہے۔

ہاویری انکم ٹیکس چیف ناگاشیان نے صحافیوں کو بتایا کہ انہیں شراب اور 10 کروڑ روپے کی ذخیرہ اندوزی کی شکایت ملی تھی، اس کے بعد منگل کی رات 12 بجے چھاپامار کارروائی کی گئی، جو آدھی رات 2 بجے تک جاری رہی۔ انہوں نے بتایا کہ یہاں نہ تو نقدی ملی اور نہ ہی شراب۔ اس چھاپے ماری پر سابق اسپیکر کولی واڑ نے بتایا کہ انکم ٹیکس اور آبکاری محکمہ کے افسران ان کی رہائش گاہ پر آئے تھے لیکن چھاپہ ماری میں انہیں کچھ نہیں ملا۔ انہوں نے کہا کہ جب سے بی جے پی اقتدار میں آئی ہے، وہ بدلے کی سیاست کر رہی ہے۔

ادھر، انکم ٹیکس اور آبکاری محکمہ کے افسران کی اس چھاپے ماری پر کانگریس کارکنوں نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے انکم ٹیکس حکام کے سامنے مظاہرہ کیا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ رانی بنور اسمبلی سیٹ سے کانگریس امیدوارکے بی کولی واڑ کے گھر پر چھاپے کے پیچھے ریاست کے وزیر داخلہ بسوراج بومئی کا ہاتھ ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *