کرناٹک: عرضی واپس لینے پر اسمبلی اسپیکر کو اعتراض نہیں

Share Article

نئی دہلی، کرناٹک معاملے پر سماعت کے دوران جمعرات کو چیف جسٹس رنجن گوگوئی نے کرناٹک اسمبلی کے اسپیکر کے وکیل ابھیشیک منو سنگھوی سے پوچھا کہ دو ارکان اسمبلی پہلے سے داخل ایک درخوات واپس لینا چاہتے ہیں، کیا آپ کو کوئی اعتراض ہے؟ اس پر سنگھوی نے کہا کہ نہیں، انہیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔اس پر کورٹ نے کہا کہ ٹھیک ہے، ہم مناسب حکم جاری کریں گے۔

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ 24 جولائی کو اس معاملے کی سماعت کے دوران جب دو آزاد اراکین اسمبلی نے سپریم کورٹ سے درخواست واپس لینے کا مطالبہ کیا تو چیف جسٹس نے پوچھا کہ وکیل روہتگی اور سنگھوی کہاں ہیں؟ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے۔ ہم سینئر وکلاء کی موجودگی میں ہی حکم جاری کریں گے۔

دراصل گزشتہ 23 جولائی کو کرناٹک میںتحریک اعتماد پر ووٹنگکے بعد ایچ ڈی کمارا سوامی کی حکومت گر گئی، جس کے بعد ان ممبران اسمبلی نے پٹیشن واپس لینے کا مطالبہ کیا۔کماراسوامی حکومت سے حمایت واپس لینے والے دو اراکین اسمبلی آر شنکر اور ایچ ناگیش نے عرضی دائر کی تھی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *