سہ روزہ جشن ریختہ کی پھردھوم 14دسمبرسے

Share Article
jashn-e-rekhta
انتظارکی گھڑی ختم ہوئی۔اس سال 14دسمبرسے نئی دہلی کے انڈیا گیٹ سے قریب دھیان چند اسٹیڈیم میں اردوفیسٹیول جشن ریختہ شروع ہورہاہے۔ریختہ فاؤنڈیشن کے بانی سنجیو صراف کے مطابق، اس موقع پردیگردلچسپ پروگراموں کے علاوہ خاص پیشکش خاتون شعراء کا مشاعرہ ہے۔اردومیں رام لیلا بھی نذرشرکاء کی جائے گی۔
14دسمبرشام چھ بجے معروف روحانی شخصیت مراری باپو جشن کا افتتاح کریں گے۔اس کے بعد انتہائی مقبول صوفی موسیقی کار اور قوال وڈالی برادران ان تقریبات کو اپنے نغموں سے رونق بخشیں گے۔15اور 16 دسمبر کو ادبی مذاکرے، داستان گوئی،چہار بیت، ڈراما، قوالی،غزل سرائی ،نوجوان شاعروں کی محفل ، خواتین کا مشاعرہ ،تمثیلی مشاعرہ، خطاطی،فلم اسکرینگ اور بہت سی دلچسپ تقریبات کے ذریعے اردو زبان اور اس کے تہذیبی رنگوں کو پیش کرنے کی کوشش کی جائے گی۔
سہ روزہ اہم پروگراموں میں جاویداخترکے والد جاں نثار اختراورشبانہ اعظمی کے والد کیفی اعظمی کی حیات وخدمات پران دونوں کے درمیان مکالمہ شامل ہے۔عیاں رہے کہ موجودہ پروگرام جشن ریختہ کا پانچوں ا یڈیشن ہے۔
جشن میں ہر بار کی طرح اس بار بھی ادب ، فلم،تھیٹر اور آرٹ کی دنیا سے اہم ترین شخصیات شامل ہورہی ہیں، جن میں خاص طور پر معروف فکشن نویس اقبال مجید ، گوپی چند نارنگ،شارب ردولوی،شمس الرحمان فاروقی، شمیم حنفی،ذکیہ مشہدی ،رتن سنگھ، پرشوتم اگروال، صدیق الرحمان قدوائی ،سدھیر چندرا،جاوید اختر ، شبانہ اعظمی، مالنی اوستھی ،وشال بھاردواج، استاد اقبال احمد خان،انو کپور، محمود فاروقی ،جاوید جعفری ،گائتری اشوکن،شروتی پاٹھک، وارثی برادر،نوراں سسٹر ، قابل ذکر ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *