جموں و کشمیر۔ پاکستانی گولہ باری میں ایک ہی خاندان کے 3 افراد ہلاک

Share Article
WhatsApp-Image-2019-03-02
پاک کی ناپاک حرکت ختم ہونے کا نام نہیں لے رہی ہے۔سرحد پار پاکستان نے جنگ بندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایل او سی پر مسلسل بھاری گولہ باری کی جا رہی ہے۔ اس فائرنگ اور شیلنگ میں جموں و کشمیر کے پونچھ ضلع کے سلوتری علاقے میں ایک ہی خاندان کے تین افراد کی موت ہو گئی جبکہ ایک زخمی ہو گیا۔مرنے والوں میں ایک خاتون اور ایک بچہ شامل ہے۔

وہیں دوسری طرف کئی گھروں پر زبردست شیلنگ کی گئی ہے۔ بہت سے گھروں میں پاکستانی گولے گرے ہے۔ پاکستان کی جانب سے پونچھ، منکوٹ، بالاکوٹ اور نوشیرا میں علاقے میں جنگ بندی کی خلاف ورزی مسلسل جاری ہے۔

فوج کے مطابق، پاکستان نے گزشتہ ایک ہفتے میں 60 سے زیادہ بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔ وزارت دفاع کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل دیویندر آنند نے کہا کہ پاکستانی فوج پونچھ، منکوٹ، بالاکوٹ اور نوشیرا میں ایل او سی کے کنارے عام شہریوں کو نشانہ بنا کر فائرنگ کر رہی ہیں۔
LOC
اس دوران بہت سے لوگوں کے سلوتری میں زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس فائرنگ کا ہندوستانی فوج منہ توڑ جواب دے رہی ہے۔ اس دوران سلوتری میں ایک ہی خاندان کے تین افراد کی موت کی خبر ہے۔ ساتھ ہی کئی لوگ زخمی بتائے جا رہے ہے۔

مینڈھر کے بالکوٹ اور بالاکوٹ علاقے اور ارد گرد کے کرشناگھاٹی علاقے میں جمعہ کی شام 6 بجے اور نوشیرا میں قریب 4.15 بجے سے فائرنگ شروع ہوئی تھی۔ اس دوران سرحد پار سے گولاباری میں شمالی کشمیر کے اری شہر میں، ایک شہری زخمی ہو گیا ساتھ ہی تین گھر بھی نقصان پہنچا ہے۔
Motrar
جموں و کشمیر کے اری کے سب ڈویزنل مجسٹریٹ ریاض ملک نے بتایا کہ 30 سے زائد لوگوں کو ان کے گاؤں سے نکال کر محفوظ مقامات پر پہنچا دیا گیا ہے۔ غور طلب ہے کہ جمعہ کو کپواڑہ میں دہشت گردوں کے ساتھ ہوئے انکاؤنٹر میں سیکورٹی فورسز کے چار جوان شہید ہو گئے تھے۔ اس کے علاوہ اس میں ایک شہری بھی مارا گیا تھا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *