جامعہ اردو علی گڑھ کی اسناد کو جلد منظوری

Share Article
jamia urdu aligarh

 

ہندستان میں اردو زبان اور روزگا کے لیے کمیٹی کی میٹنگ

 

جامعہ اردو علی گڑھ کو ڈیمڈ یونیورسٹی کا درجہ دیا جاناچاہیے.:پروفیسر ایس این تیواری

 

جامعہ اردو کا نصاب این سی آرٹی پر مبنی ہے: زبیر شاداب

علی گڑھ. 16 مئی. وزارت برائے فروغ انسانی وسائل کے ماتحت کام کرنے والی ہندستان میں اردو زبان اور روزگار کے لیے کمیٹی کج ایک خصوصی میٹنگ آج جامعہ اردو میں واقع کیمپ دفتر میں ہوئی جس میں کئی اہم فیصلے کئے گئے.
اس سلسلے میں کمیٹی کے ممبر ڈاکٹر جسیم محمد نے بتایا کہ حکومت ہند کے این سی ای ایم آئی نے ملک میں زمینی سطح پر اردو زبان کی محبت موجودہ صورتحال اور اس کو روزگار سے جوڑنے کے لیے یہ کمیٹی بنائی تھی، انہوں نے بتایا کہ جامعہ اردو کء ایک خصوصی میٹنگ جامعہ اردو میں واقع کیمہ دفتر میں ہوئی جس میں اردو کی صورت حال سمیت دیگر اہم مسائل پر بحث و مباحثہ ہوا

ڈاکٹر جسیم محمد نے کہا کہا کہ کمیٹی جلد ہی مدرسوں میں نصاب پر اپنی رپورٹ حکومت ہند کو پیش کریگی.

کمیٹی کے چیئرمین پروفیسر رضااللہ خاں نے کہا چونکہ حکومت ہند نے اس کمیٹی کو اردو زبان کی موجودہ صورتحال کا سروے کرنے کی ذمہ داری سونپی ہے اس لیے کمیٹی کو مختلف ریاستوں کا دورہ کرکے زمینی حقیقت دیکھنا چاہیے.
کمیٹی کی کنوینر شائستہ غفار نے کہا کہ اردو زبان کی صورت حال ملک میں اچھی نہیں ہیخاص طور ان ریاستوں میں جہاں اردو جاننے والے زیادہ رہتے ہیں مثلا اترپردیش، یہاں بھی اردو کی جانب توجہ نہیں دی گئی. انہوں نے کہا کہ یوپی نے اردو دوسری سرکاری زبان کا درجہ تو ضرور دیا ہے لیکن اس کو زمینی سطح پر نافذ نہیں کیا گیا ہے.

 

پروفیسر ایس این تیواری نے کہا کہ سمیتی اور جامعہ اردو علی گڑھ دونوں اردو روزگار سے جوڑنے پر بہت اہم کام کر رہے ہیں اس سلسلے میں اب حکومت اترپردیش کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے.
کمیٹی کے رکن فرحت علی خاں نے کہا کہ لسانی اقلیتی کمیشن نے جامعہ اردو علی گڑھ کو ڈیمڈ یونیورسٹی کا درجی دیے جانے کی سفارش کی تھی لیکن ابھی تک اس کو یہ درجہ نہیں مل سکا ہے. انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ملک و قوم کے حق میں جامعہ اردو کو ڈیمڈ یونیورسٹی کا درجہ دیا جائے.

 

کمیٹی کے رکن ڈاکٹر زبیر شاداب نے کہا کہ جامعہ اردو کی تعلیم کو ریاستی بورڈ کے مساوی درجہ دیاجانا چاہییکیونکہ جامعہ اردو کا نصاب این سی اآر ٹی کے پر مبنی ہے. انہوں نے کہا کہ جامعہ اردو علی گڑھ اردو کو روزگار سے جوڑنے کا بہت اہم کام کر رہاہے.

 

میٹنگ میں کمیٹی نے باتفاق رایے مطالبہ کیا کہ جامعہ اردو کو ڈیمڈ یونیورسٹی کا درجہ دیاجاییارلور یوپی، بہار، دہلی کی حکومتیں اردو زبان کے دواری سرکاری زبان کے فیصلے کو فورا زمینی سطح پر نافذ کریں.
کمیٹی کی میٹنگ میں مدعوئین خاص شمعون رضا نقوی، فہد علی خان، ڈاکٹر آفتاب عالم نجمی، ڈاکٹر دولت رام شرما وغیرہ موجود تھے.

 

 

 

ڈاکٹر جسیم محمد
سکریٹری، اردو زبان کے لیے کمیٹی
09997063595

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *