اجولا اسکیم کا فائدہ زمین پر نہیں دکھائی دے رہاہے: کانگریس

Share Article

jaiveer-shergill

نئی دہلی: کانگریس پارٹی نے مفت گیس کنکشن دینے والی پردھان منتری اجولا یوجنا پر سوال اٹھائے ہیں۔ پارٹی کا کہنا ہے کہ اس کا زمین کی سطح پر لوگوں کو فائدہ نہیں ملا ہے اور زیادہ تر لوگ دوبارہ لکڑی کے چولہے کی طرف واپس آ رہے ہیں۔دہلی میں کانگریس کے ترجمان جے ویر شیر گل نے پریس کانفرنس کر کے کہا کہ وزیر اعظم مودی کی تقریروں سے ترقی، اچھے دن، سب کا ساتھ سب کا وکاس جیسے لفظ غائب ہو گئے ہیں۔ وہ اپنے پانچ سالوں کی کوئی بات نہیں کرتے۔ وہ اپنی تقریروں میں صرف پاکستان کا نام لے رہے ہیں کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ انہوں نے ہندوستان کے لئے کچھ نہیں کیا۔

شیر گل نے کہا کہ وزیر اعظم کااجولا یوجنا کا دعویٰ حقیقت سے کہیں مختلف ہے۔مستفدین آج پھر چولہے استعمال کرنے کے لئے مجبور ہیں۔ آج بی جے پی کے لوک سبھا امیدوار ہی وزیر اعظم اجولا یوجنا کی پول کھول رہے ہیں۔ 2015 میں آئی سی اے جی کی رپورٹ کے مطابق پہلے ایل پی جی 6.7 فیصد تھا، آج یہ 5.6 فیصد رہ گیا ہے۔چار ریاستوں اتر پردیش، مدھیہ پردیش، راجستھان اور بہار ریاستوں کے سروے سے سامنے آیا ہے کہ 80 فیصد لوگ گیس مہنگی ہونے کے چلتے اب بھی لکڑی کے چولہے پر کھانا پکاتے ہیں۔ اتر پردیش میں اس منصوبہ کے تحت سب سے زیادہ سلنڈر دیے گئے۔ سیتاپور میں محض 10 فیصد لوگ ہی سلنڈر دوبارہ بھرانے آئے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *