ایرانی ڈرونز کی عراق کے کرد علاقوں میں بم باری

Share Article
An Iranian missile launches toward a military base belonging to a Kurdish separatist group in Iraq

 

ایران کے علاقے کردستان میں کئی روز سے ایرانی پاسداران انقلاب اور ایرانی کْردوں کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ دیکھا جا رہا ہے۔ مذکورہ کردوں نے اپنے ہیڈ کوارٹرز عراقی سرزمین پر بنا رکھے ہیں۔ ایران کی جانب سے کی جانے والی کارروائیوں میں قابل ذکر بات یہ ہے کہ ایران کی سرحدوں سے باہر بالخصوص کردستان ریجن میں عراقی سرزمین پر موجود ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کے لیے پہلی مرتبہ ڈرون طیاروں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔

Image result for Iranian drone strikes bomb in Iraq's Kurdish regions

ایرانی خبر رساں ایجنسی ’تسنیم‘ کے مطابق پاسداران انقلاب کی زمینی فوج نے جمعہ کے روز ایک بیان جاری کیا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس نے عراقی کردستان کے ساتھ سرحدی علاقے میں مسلح گروپوں کے ٹھکانوں پر بم باری کی ہے۔ بیان کے مطابق یہ اقدام ایران کے مغربی اور شمال مغربی علاقوں میں حالیہ’دہشت گرد‘ کارروائیوں کے جواب میں کیا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق ایسا نظر آ رہا ہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب نے ڈرون طیاروں کے یونٹ کو قائم کر کے مختصر عرصے میں اسے ترقی دی ہے۔ یہ پیش رفت بالعموم ایرانی فضائیہ اور بالخصوص پاسداران انقلاب کی زمینی فوج کی کمزوری کے پیش نظر سامنے آئی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *