پاکستان کی دھمکی پر ہندوستانی فوج کا جواب- 71 سے بھی برا حال کریں گے، نسلیں یاد رکھیں گی

Share Article

پاکستان کی جانب مل رہی دھمکیوں پر فوج نے کرارا جواب دیا ہے۔ فوج کی چنار کورپس کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل كےجےایس ڈھلون نے بدھ کو کہا کہ پاکستانی فوج کو ہر کوشش کرنے دیجئے، ہم ان کو کرارا جواب دیں گے، جسے ان کی نسلیں یاد رکھیں گی۔ ہم پاکستان کو 1971 سے بھی برا حال کریں گے۔

پاکستان کی جانب مل رہی دھمکیوں پر فوج نے کرارا جواب دیا ہے۔ فوج کی چنار کورپس کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل كےجےایس ڈھلون نے بدھ کو کہا کہ پاکستانی فوج کو ہر کوشش کرنے دیجئے، ہم ان کو کرارا جواب دیں گے، جسے ان کی نسلیں یاد رکھیں گی۔ ہم پاکستان کو 1971 سے بھی برا حال کریں گے۔

بتا دیں کہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان سمیت ان کے کئی وزیر جوہری حملے کی دھمکی دے چکے ہیں۔ اگرچہ حال ہی میں عمران نے اپنے ایک مضمون میں بات چیت کی طرف اشارہ کیا تھا۔ دراصل، جموں اور کشمیر سے دفعہ 370 ہٹائے جانے کے بعد سے پاکستان بوكھلايا ہوا ہے۔ وہ اس معاملے کو بہت سے ممالک کے سامنے اٹھا چکا ہے، لیکن ہر جگہ سے اسے شکست ہی ملی۔

لیفٹیننٹ جنرل كےجےایس ڈھلون اور جموں و کشمیر پولیس کے اے ڈی جی منیر خان نے بدھ کو پریس کانفرنس کی۔ انہوں نے بتایا کہ ہندوستانی فوج نے دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ کے دو دہشت گردوں کو گرفتار کیا ہے۔ دونوں دہشت گردوں کو 22 اگست کی رات بارہمولہ سے گرفتار کیا گیا۔ پریس کانفرنس کے دوران پکڑے گئے دہشت گرد کی ویڈیو بھی جاری کیا گیا۔گرفتار کئے گئے دہشت گردوں کے نام خلیل احمد اور معظم نقصان ہیں۔

حکام نے کہا کہ وادی میں پاکستان کی جانب سے دراندازی کی کوشش کی جا رہی ہے۔ پاکستان کشمیر میں بدامنی پھیلانا چاہتا ہے۔ پاکستان کی فوج دہشت گردوں کی مدد کر رہی ہے۔

لیفٹیننٹ جنرل كےجےایس ڈھلون نے کہا کہ بہت سے دہشت گرد دراندازی کی کوشش میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تفتیش میں لشکر کے دہشت گردوں نے بتایا کہ کنٹرول لائن کے پار دہشت گرد کشمیر میں بدامنی پھیلانے اور حملے کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *