خواتین کیلئے ہندوستان دنیامیں سب سے خطرناک ملک:سروے

Share Article
stop-violence-against-women
خواتین کے لئے سب سے خطرناک ممالک میں ہندستان نمبرایک پرہے۔تھامسن رائٹرس فاؤنڈیشن کے ایک سروے میں خواتین کے تئیں جنسی زیادتی اورسیکس بازاروں میں دھکیلے جانے کے تحت ہندوستان کوسب سے خطرناک بتایاگیاہے۔خواتین کے ساتھ ظلم و جبر کے حوالے سے ایک تازہ رپورٹ پر جس میں کہا گیا ہے کہ ہندستان عورتوں کے لئے انتہائی خطر ناک ملک ہے۔سروے میں بتایاگیاہے کہ آتنگوادسے متاثرافغانستان اورشام سلسلہ واردوسرے اورتیسرے نمبرپرہے۔اس فہرست میں پاکستان چھٹے نمبرپرجبکہ امریکہ دسویں نمبرہے۔سروے میں بتایاگیاہے کہ ہندستان خواتین کی آبروریزی اور ان پر تشدد کرنے والے افغانستان، شام اور سعودی عرب جیسے ملکوں میں سر فہرست ہے۔
سروے میں خواتین کے حقوق پرکام کرنے والے قریب 550ایکسپرٹس شامل ہوئے تھے۔انہیں 193ملکوں میں خواتین کیلئے بدترملکوں میں ٹاپ 10رینگ دینے کوکہاگیاتھا۔امور خواتین کے 550 ماہرین پر مشتمل تھامسن رائٹرز فاؤنڈیشن کے سروے کے مطابق ہندستان عورتوں پر جنسی زیادتی کے معاملے میں انتہائی خطر ناک ملک ہیجہاں عورتوں کو زبردستی خادمہ، مزدور، جنسی غلام بننے کے علاوہ شادی کرنے پر مجبور کیا جاتا ہے۔
رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بعض ثقافتی روایات کے عورتوں پر پڑنے والے اثرات کے لحاظ سے بھی ہندستان دنیا کا ایک خطرناک ملک ہے۔ان ثقافتی رسومات میں تیزاب پھینکنے کے واقعات، کم عمر کی شادیاں، اور جسمانی تشدد کے واقعات شامل ہیں۔
تازہ سروے میں افغانستان دوسرے نمبر پر ہے اور گزشتہ سات برسوں سے جنگ زدہ شام کو صحت عامہ تک محدود رسائی کے علاوہ جنسی اور غیر جنسی تشدد کی وجہ سے تیسرا خطرناک ترین ملک قرار دیا گیا ہے۔ شامل فہرست اولین دس ممالک میں امریکہ بھی واحد مغربی ملک کے طور پرشامل ہے۔
سروے میں شامل ایک امریکی ماہر کا کہنا ہیکہ افغان خانہ جنگی اورتنازعات میں آنیوالی شدت کی وجہ سے وہاں خواتین اور بچیوں کی زندگیوں کو خطرات لاحق ہیں۔ اس لئے وہ اس حوالے سے دنیا کا دوسرا خطرناک ملک ہے۔افغانستان میں سلامتی کی ابتر صورتحال نے خواتین کی زندگی اجیرن کر کے رکھ دی ہے۔ 2017سے جاری درون ملک جنگ میں ملک کے زیادہ تر علاقوں میں اب طالبان کا قبضہ ہے۔
سرکاری اعدادوشمارکے مطابق، ہندوستان میں 2007سے 2016کے بیچ خواتین کے جرم میں 83فیصداضافہ ہواہے۔وہیں ہرگھنٹے چارریپ کے معاملے درج ہوتے ہیں۔نیشنل کرائم بیوروکے مطابق، یہاں روزانہ 100سے بھی زیادہ جنسی زیادتی کے کیس درج ہوتے ہیں۔ 2011میں ہوئے اس سروے مطابق، افغانستان ، کانگو، پاکستان ، ہندوستان اورصومالیہ خواتین کیلئے سب سے خطرناک ملک مانے گئے تھے۔لیکن اس خواتین کے تئیں بڑھے جرائم کے معاملے ہندوستان سب سے آگے نکل گیا۔قبل ازیں2011 کے ایک ایسے سروے میں ہندستان خطر ناک ملکوں کی فہرست میں چوتھے ا ور پاکستان تیسرے نمبر پر تھا جبکہ افغانستان سر فہرست تھا۔بہرکیف اب اس معاملے ہندوستان سب سے آگے نکل گیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *