جس میں انسانیت نہیں وہ انسان نہیں ہوسکتا :نواب کاظم علی خان 

Share Article
nawab
حیدرآباد:امبیڈکر نیشنل کانگریس اور انو ورت سمیتی کے اشتراک سے ڈی وی کالونی تیرا پنتھ میں یو م فرقہ وارانہ ہم آہنگی پروگرام کا انعقاد کیا گیا ۔جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ کاشی سے کاٹھ مانڈو تک 20اکتوبر سے 25اکتوبر تک بائک ریلی نکالی جائے گی ۔پروگرام میں انوورت سمیتی کے صدر پرسن بھنڈاری نے تمام ہی مذاہب کے نمائندوں کا پرتپاک استقبال کیا ۔اس موقع پر ارون گپتا کو انوورت سمیتی نے عظیم خاتون اعزاز سے نوازا۔تمام ہی مذہبی پیشوا اور رہنماؤں کو بھی اعزاز سے نوازا گیا ۔
اس موقع پر امبیڈکر نیشنل کانگریس کے قومی صدر نواب کاظم علی خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جس میں انسانیت نہیں وہ انسان کبھی نہیں ہوسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مہاتما گاندھی نے’ہند۔سوراج‘ کتاب میں ہندوستان کی حالت ’’ہندو مسلمان‘‘میں کہا ہے: ہندوستان میں چاہے جس مذہب کے آدمی رہ سکتے ہیں، اس سے وہ ایک قوم مٹنے والا نہیں ہے۔نئے وہ لوگ جو داخل ہوتے ہیں، وہ اپنے لوگوں میں گھل مل جاتے ہیں۔ اگر ایسا ہوتا ہے تو تبھی کوئی ملک قوم بن جاتا ہے۔ایسے ملک میں دوسرے لوگوں کو شامل کرنے کی صلاحیت ہونی چاہئے۔ ہندوستان اس طرح تھا اور آج بھی یہ ہے۔ ایک قوم ہو کر رہنے والے لوگ دوسرے کے مذہب میں دخل نہیں دیتے، اگر دیتے ہیں تو سمجھنا چاہئے کہ وہ ایک قوم ہونے کے قابل نہیں ہیں ۔۔۔ ’بھارت دنیا کے تمام عظیم مذاہب کا گھر رہا ہے، کچھ مذہب یہاں پیدا ہوئے تو کچھ مذاہب کی جڑیں ہمارے سب سے قدیم ترین ملک سے منسلک ہیں۔کسی مذہب میں تشدد کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے، کوئی مذہب نفرت نہیں سکھاتا،جو لوگمذہبکو تشدد، علیحدگی پسند اور بھید بھاؤکے لئے استعمال کرتے ہیں وہ اپنے مذہب کے لئے وفادار کبھی نہیں ہو سکتے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ مذہبی ہم آہنگی ہمارے ملک کی سب سے بڑی روایت رہی ہے۔ ہندوستانی ثقافت اور تمدن نے دنیا میں فخر اور احترام پایا ہے۔ قدیم ثقافت اور تہذیب کے امیر ورثے کو محفوظ رکھنا ملک کے ہر شہری کا فرض ہے تاکہ فرقہ وارانہ ہم آہنگی بنا رہے اور ملک کے اتحاد اور سالمیت محفوظ رہے۔پروگرام کے آخر میں انوورت سمیتی کے پرکاش بھنڈاری نے اظہار تشکر پیش کیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *