پھر تیجسوی کے ساتھ ہیلی کاپٹر سے چناوی جلسوں میں خطاب کرنے نہیں جا سکے تیج پرتاپ

Share Article

 

کون تیج اور تیجسوی کے درمیاں اختلاف کو ہوا دے رہا ہے

Image result for I could not addressing election rallies in the helicopter with fiery Tej Pratap

آرجے ڈی سربراہ لالو یادو کے بڑے بیٹے تیج پرتاپ یادو کے ستارے ان دنوں گردش میں ہیں۔ اپنا سیاسی وجود بچانے کے لئے ایک ساتھ انہیں کئی مورچوں پر لڑنا پڑ رہا ہے۔ کہا تو یہاں تک جا رہا ہے کہ جس طرح سے پارٹی کے مین اسٹریم سے انہیں درکنار کیا جا رہا ہے وہ پارٹی کے اندر لالو خاندان کے قیادو کی وراست کو لیکر چل رہی شازشوں کا ہی ایک حصہ ہے۔ اسکا اگلا شکار تیجسوی یادو ہو سکتے ہیں۔ معلومات کے مطابق ا?رجے ڈی کے اندر ایک گروہ تیجسوی یادو کے بجائے میسا بھارتی کو بہار کا وزیر اعلیٰ بنانا چاہ رہا ہے۔ اسکے لئے ایک جانب وہ میسا بھارتی کو اکسا بھی رہا ہے اور ساتھ میں تیج پرتاپ اور تیجسوی کے درمیان دیوار کھڑی کرنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ چھوٹے بھائی تیجسوی یادو تو ہیلی کاپٹر میں گھوم گھوم کر انتخابی جلسوں میں شرکت کر رہے ہیں ، جبکہ تیج پرتاپ یادو کو بورڈنگ پاس نہ ملنے کی وجہ سے ایئر پورٹ سے بیرنگ لوٹنا پڑ رہا ہے۔ جمعرات کے روز ایک مرتبہ پھر انکے ساتھ اسی طرح کا معاملہ پیش ا?یا۔ بورڈنگ پاس نہ ہونے کی وجہ سے وہ تیجسوی یادو کے ساتھ انتخابی مہم میں شرکت کرنے کے لئے نہیں جا سکے۔ واضح ہو کہ 5 دن قبل بھی بورڈنگ پاس نہ ہونے کی وجہ سے تیج پرتاپ یادو کو ایئرپورٹ سے خالی ہاتھ واپس ا?نا پڑا تھا۔ اس بات کو لیکر نامہ نگاروں کے سامنے اپنی ناراضگی کا اظہار کرتے ہوے انہوں نے کہا تھا کہ دراصل کچھ لوگ نہیں چاہتے کہ دونوں بھائیوں کے درمیان تعلقات بہتر ہو۔ اسلئے وہ لوگ مسلسل ایسے حالات پیدا کرنے میں لگے ہوئے ہیں کہ دونوں ساتھ نہیں بیٹھ سکے۔

 

Image result for I could not addressing election rallies in the helicopter with fiery Tej Pratap

تیج پرتاپ یادو کے قریبی لوگوں نے بتایا تھا کہ وہ جمعرات کو 8 مختلف مقامات پر منعقدہ انتخابی جلسوں میں خطاب کرنے کے لئے اپنے چھوٹے بھائی تیجسوی یادو کے ساتھ ہیلی کاپٹر سے جا رہے ہیں۔ لیکن ایک مرتبہ پھر تیجسوی یادو ہیلی کاپٹر سے روانہ ہو گئے اور انہیں مایوس ہوکر پٹنہ میں ہی قیام کرنا پڑا۔ انکے قریبی ذرائع کا کہنا ہے کہ انکو بار بار بورڈنگ پاس کیوں نہیں مہیا کریا جا رہا ہے خود انکی سمجھ میں نہیں ا? رہا ہے۔ ا?رجے ڈی سے تعلق رکھنے والے ذرائع کا کہنا ہے کہ در اصل ا?رجے ڈی کے ہی ایک قومی لیڈر تیج پرتاپ اور تیجسوی یادو کو ایک دوسرے سے لڑانے میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔ یہاں تک لالو کی بڑی بیٹی میسا بھارتی کو بھی انہوں ے اپنے اثرمیں لے رکھا ہے۔ وہ میسا بھارتی کو بہار کا وزیر اعلیٰ بننے کا خواب دکھا رہے ہیں۔ انہوں نے میسا بھارتی کے ذہن میں یہ بات بیٹھانی شروع کر دی ہے کہ اگر دونوں بھائی ا?پس میں لڑیں گے تبھی وزیر اعلیٰ کے عہدے کی جانب میسا بھاری کی راہ ہموار ہوگی۔ ذرائع کے مطابق تیج پرتاب یادو کو بھی اس بات کا احساس ہے کہ دلی میں ٹھکانہ بنائے ہوئے ا?رجے ڈی کے ایک قومی رہنما انکے خلاف مسلسل شازشیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے پارٹی کے اندر یہ اعلان بھی کر دیا ہے کہ جس دن وہ انکے سامنے پڑ گئے تو انکی خیر نہیں۔ وہ اس بات سے باخبر ہیں اسلئے تیج پرتاپ یادو کے سامنے آنے سے گریز کر رہے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *