Google Pay کی بڑھ سکتی ہے مشکلیں، دہلی ہائی کورٹ نے ریزرو بینک سے مانگا جواب

Share Article
RBI

دہلی ہائی کورٹ نے ریزرو بینک آف انڈیا سے گوگل پے ایپ(google pay app ) کولیکر جواب طلب کیا ہے۔ ہندوستان میں کافی مقبول ڈیجیٹل ادائیگی ایپ گوگل پے کو لے کر دہلی ہائی کورٹ نے ریزرو بینک آف انڈیا سے سوال پوچھا ہے۔دہلی ہائی کورٹ نے اس معاملے میں دائر ایک مفاد عامہ کی عرضی پر سماعت کرتے ہوئے آر بی آئی اور گوگل انڈیا سے جواب مانگا ہے کہ بغیر منظوری ہندوستان میں گوگل پے ایپ کیسے چل رہا ہے۔ بتا دیں کہ درخواست میں دعوی کیا گیا ہے کہ گوگل پے ایپ بغیر سرکاری منظوری کے کام کر رہا ہے۔

دراصل دہلی ہائی کورٹ میں Google Pay کو لے کر ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر کی گئی تھی. درخواست گزار کا الزام ہے کہ گوگل پے ایپ بغیر سرکاری منظوری کے غیر قانونی طور پر ملک میں اپنی خدمات دے رہا ہے۔مفادعامہ درخواست میں کہا گیا ہے کہ Google Pay کو آربی آئی سے کوئی ویلڈیٹی سرٹیفکیٹ نہیں ملا ہے۔دہلی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس راجندر مینن اور جسٹس اے جے بھنبھانی کی بنچ نے عرضی پر سماعت کرتے ہوئے ریزروبینک اورگوگل انڈیا کو اس سلسلے میں نوٹس جاری کیا ہے۔

غور طلب ہے آربی آئی کی طرف سے جاری کی گئی اتھارائزڈ ‘’ادائیگی کے نظام آپریٹرز‘کی فہرست میں گوگل پے کا نام شامل نہیں ہے۔ جس کے بعد سے ہی ملک میں گوگل پے کو لے کر ہنگامہ مچا ہوا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *