چھتیس گڑھ میں ہنی ٹریپ کا معاملہ، ملزم لڑکی گرفتار

Share Article

مدھیہ پردیش کی طرح چھتیس گڑھ میں ہنی ٹریپ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ہنی ٹریپ کو لے کر ریاست میں سیاسی ہنگامہ آرائی کے بعد اب اسی طرح کا معاملہ اجاگر ہوا ہے۔ دارالحکومت رائے پور میں ایک لڑکی پراپنے حسن کے جال میں پھنسا کر کاروباری کو پیسہ کمانے کا ذریعہ بنانے کا الزام لگا ہے۔ لڑکی پر الزام ہے کہ وہ کاروباری کو بلیک میل کر کے اس سے 1 کروڑ 38 لاکھ 51 ہزار روپے وصول چکی ہے۔ اس کے بعد بھی وہ اس سے مزید پیسوں کا مطالبہ کر رہی تھی۔ پولیس نے جال بچھا کر چھتیس گڑھ میں ہنی ٹریپ کا معاملہ بے نقاب کیا ہے۔

اس ہنی ٹریپ جیسے معاملے میں ایک اور حیران کن انکشاف ہوا ہے۔ میڈیکل کی پڑھائی کر رہی ہے طالبہ پریتی تیواری اپنے منگیتر رنکو شرما کے ساتھ مل کر یہ بلیک میلنگ کا کام کرتی تھی۔ پریتی کے بھوپال اور دہلی میں کنکشن ہونے کی بات سامنے آئی ہے۔

معاملے میں منگیتر سمیت 4 اور لوگ شامل ہیں جن کو پولیس تلاش کر رہی ہے ۔رائے پور پولیس سے ملی معلومات کے مطابق تاجر چیتن شاہ نے پنڈری تھانے میں شکایت درج کرائی تھی۔ اس میں انہوں نے قابل اعتراض ویڈیو بنانے کی دھمکی دے کر بلیک میل کرنا بتایا۔ اس کے بعد کچنا ریلوے کراسنگ کے قریب سول وردی میں تعینات خاتون پولیس اہلکاروں نے ملزم عورت 50 لاکھ روپے کی وصولی کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کرلیاملزم لڑکی پہلے کاروباری سے قریب 1 کروڑ 38 لاکھ 51 ہزار روپے وصول چکی تھی۔ پولیس اب لڑکی کے منگیتر رنکو شرما سمیت اس کے 4 دیگر ساتھیوںکی تلاش کر رہیہے ۔ پولس کے پاس درج شکایت کے مطابق ملزم لڑکی کاروباری کو مسلسل بلیک میل کر کے نہ صرف اس سے پیسے وصول رہی تھی بلکہ اس کی کریٹا ایس یو وی کو بھی اپنے قبضے میں لے رکھا تھا۔ ملزم لڑکی کا منگیتر گاڑی کو لے کر فرار ہے۔ پولیس اس کی تلاش کر رہی ہے۔ پولیس کی تحقیقات میں لڑکی کے بھوپال اور دہلی سے بھی رابطے سامنے آئے ہیں۔

پولیس مدھیہ پردیش میں پھنسے ہنی ٹریپ گینگ سے اس لڑکی کے رابطے ہونے کی بھی تحقیقات کر رہی ہے۔ متاثر کاروباری کے ذریعہ درج کرائی گئی ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ لڑکی پہلے اس سے بات چیت کرتی تھی۔ پھر وہ اسے اپنے حسن کے جان میں پھنسا کر بلیک میل کرنے لگی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *