نوزائیدہ بچوں میں دل کے امراض لاعلاج نہیں

Share Article

 

پیشکش: گیان بھدر
نوزائیدہ بچوں میں دل کا مرض ایک شدید اور اہم مسئلہ ہے۔اگرچہ بچوں میں دل کے امراض علاقے میں ہونے والی نئی تحقیقات سے ثابت ہے کہ بچوں کے دل مرض سے گھرے ہوئے ہیں ،بچوں اور نوزائیدہ بچوں میں زندگی گزارنے کے لئے امید کی نئی کرن پیدا کر دی ہے۔

 

Image result for heart problems in children

لیکن ہمارے ملک خاص طور پر چھوٹے چھوٹے قصبوں اور گاؤں میں دل کی بیماری میں مبتلا نومولود بچوں کے علاج کی معلومات ، غیر موجودگی، اور بچوں کے بڑے ہونے کا انتظار کیا جاتا ہے۔لیکن بچوں کے پانچ سال کی عمر ہونے تک، دل کی بیماری کافی سنگین حالت تک پہنچ جاتی ہے. اور ایسی صورت میں،ماہرین (کارٹولوجیسٹ )بچوں کو بچا نہیں پاتے ہیں۔
ــ’’اصل میںبچوں میں دل کی ترقی ایک پیچیدہ عمل ہے. اور اس عمل میں تھوڑی سی غیر معمولی حالت اور خاص خصوصیات کے ساتھ ہونے والی حالت ماں کے رحم مادر میں نومولود بچوں کے لئے دل کی بیماری کا سبب بن سکتا ہے،’’ یہ کہنا ہے کہ ڈاکٹر دنیش چندرا کا جوکہ گڑگاؤں میںواقع میدانتا میڈی سٹی ہسپتال کے میدانتا ہارٹ انسٹی ٹیوٹ کے ڈپارٹمینٹ میں مشیر، قریبی کارڈک سرجری کے عہدے پر فرائض انجام دیں رہے ہیں۔
لہذا یہاں ان کے انٹرویو کے کچھ اہم سوالات و جوابات ہیں:
سوال: براہ کرم ہمارے قارئین بچوں میں ہونے والے دل کے امراض سے آگاہ کرائیں؟
جواب: حقیقت میں پیدائشی طور پر دل کے امراض کئی طرح کے ہوتے ہیں کچھ امراض عام سطح کے ہو تے ہیں مثلاً دل کے نچلے حصہ (چیمبر) کو الگ کرنے والی دیوار میں سوراخ کا ہونا ،اور اس چھیسوراخ کی وجہ سے دل کے بائیں اور دائیںجانب سے آنے والا خون مل جاتا ہے۔

 

Image result for heart problems in children

بچوں میں ہونے والے عام دل کے امراض کی دوسری مثال یہ ہے۔دل میں تنگ والو(دریچہ)کا ہونا،دل میں والو کے سکڑنے کی وجہ سے پھیپھڑوں اور جسم کے دیگر حصوں میں خون کا بہاو رک جانا ہے۔
کچھ دل کے امراض پیچیدہ ہیں. یہ عام دل کی خرابیاں مخلوط شکل میں ہوتی ہیں.
دل اوردل کی طرف اور دل سے باہر جانے والی، دل میںخون کی نالکاؤں کے مقام سے متعلق مسائل وغیرہ۔
سوال: نوزائیدہ بچوں میں ہونے والے دل کے امراض کون کون سے ہیں؟
جواب: نوزائیدہ بچوںمیں دل کے امراض عام طور پر دو قسم کے ہوتے ہیں:
۱۔ ٹرانسپوزیشن آف گریٹ آرٹرز
۲۔ ہائپوپلاسٹک لیفٹ ہارٹ سنڈروم
۱۔ ٹرانسپوزیشن آف گریٹ آرٹرز۔ یہ دل کا مرض پیدائشی ہوتا ہے، اس دل کے مرض میں ایٹرا (مہادھمنی) دل کے داہنے نکاسی کے ساتھ منسلک ہوتا ہے ،اصل میں یہ دل کی ساخت سے متعلق خرابی ہے۔
عام دل میں پلمنوری ،دھندلی جوکہ خون کو دل سے پھیپھڑوں کی طرف لے جاتے ہیں، دائیں ویٹرکل (نچلہ داہنا حصہ) سے منسلک ہوتے ہیں۔اور ا یٹرا جوکہ آکسیجن مشتمل خون کو دل سے جسم کے دوسرے حصوں میں بہاؤکرتا ہے، بائیں ویٹرکل (نچلہ بائیں حصہ ) سے منسلک ہوتا ہے۔

 

Image result for heart problems in children

دل کی اس غیر معمولی ساخت نقائص کی وجہ سے آکسیجن سے مبرا خون دل کی دا ہنی طرف سے بہہ کر واپس جسم کے دیگر حصوں میں چلا جاتا ہے۔اور آکسیجن پر مشتمل خون دل کے بائیں طرف سے بہہ کر براہ راست پھیپھڑوں میںآجاتاہے۔یہ آکسیجن خون کے دوسرے حصوں میں نہیں جاتا ہے۔
اس بیماری میں بنا آکسیجن خون جسم کے حصوں میں جاتا ہے جس سے چہرے کا رنگ نیلا ہو جاتا ہے۔
۲۔ ہائپوپلاسٹک لیفٹ ہارٹ سنڈروم۔
اس بیماری میں دل کا بائیں حصہ خاص طور پر تیار نہیں ہوتا ہے اس کی وجہ سے، دل کا بائیں حصے کو مؤثر طور پر جسم میں خون کو پمپ نہیں کرپاتا ہے۔
ناروڈ سرجری کے طریقہ عمل کے ذریعہ اس مرض کا علاج کیا جاتا ہے۔
ہمارا ناروڈ سرجری کا ایک محدود تجربہ ہے۔اس کے پیچھے بنیادی وجہ یہ ہے کہ ایسے دل کے مریضوں کو پہلے زیر ترقی اور غیر منظم شدہ چھوٹے ہسپتالوں میں علاج کیا جاتا ہے۔نتیجہ یہ ہوتاہے کہ دل کے مریض کا وقت پر علاج نہیں ہوتاہے۔اور یہ بیماری پیچیدہ شکل اختیا ر کر لیتی ہے۔

 

سوال: آپ نے نوزائیدہ بچوں کے بارے میں بتایا،جو تھوڑے بڑے بچوں میں کس طرح دل کے مرض کی عکاسی کرتے ہیں؟
جواب: ۱۔ ٹیٹرالاجی آف فالو
بچوں کی ٹیٹرالاجی آف فالو میںدل کے مرض کا عموماً مشاہدہ کیا گیا ہے۔
اس دل کی بیماری میں، دل جسم کے دیگر حصوں میں آکسیجن کم خون پمپ کرتا ہے۔
یہ امراض چار نسلوں کے دل کی خرابیوں کے مشترکہ شکل میں ظاہر ہوتا ہے۔اس بیماری میںبچپن کے مرحلے کے دوران دل کے مریض کی سرجری کراکر علاج کرنا چاہئے۔
۲۔وینٹری کولر سیپٹل ڈیفیکٹ۔
اس دل کے مرض میں دل کے دو نچلی طرف سے گھرے ہوئے حصے (اسے ہم بائیں اور دائیں ویٹریکل کہتے ہیں) کو علیحدہ کرنے والی دیوارنما جھلی میں سوراخ ہونے کی وجہ سے دائیں ویٹریکل والا آکسیجن مبرا خون بائیں ویٹریکل میں بہہ کرآکسیجن شامل خون میں مل جاتا ہے۔
۳۔آٹریل لر سیپٹل ڈیفیکٹ۔
اس دل کے مرض میں، دل کے اوپر کے حصے کو علیحدہ کرنے والی دیوارنما جھلی میں سوراخ ہوتا ہے.۔یہ سوراخ چھوٹا یا بڑا ہوسکتا ہے۔اگر اس بیماری کو بروقت علاج نہیں کیا گیا ہے، تو دل کا داہنا حصہ غیر معمولی طور پر بڑا ہو جاتا ہے ۔اور بچوں میں، دل کی دھڑکن غیر معمولی طور پر بے قابو(بعض اوقات دل کی دھڑکن کم رفتار اور تیز رفتار) ہوجاتی ہے ۔
۴۔ کارکٹشن آف ایوٹا۔
اس دل کے مرض میں ایوٹا(مہادھمی) تنگ ہو جاتاہے اور تنگ حصہ میں بلڈپریشر بڑھ جاتا ہے جسم میں خون کا بہاؤ محدود ہو جاتا ہے۔
۵۔آرٹوینٹر اکو لرکینل
اس دل کے مرض میں دل کے دائیں اور بائیں اور چاروں طرف سے گھرے ہوئے حصوں کے درمیان بڑے سوراخ ہوتے ہیں۔اس دلیل کی کمی میں دل کے اوپری اور نچلے خلیہ دونوںمتاثر ہوتے ہیں۔اور دل کے اوپری و نچلے حصہ کو عام طور پر علیحدہ کرنے والے ٹرائیکسپیڈ اور مائٹرل والو کی جگہ ایک بڑا والو جگہ لے لیتا ہے ۔ اگر اس مرض کا علاج نہیں کیا جاتا، تو بچوں میں مناسب جسمانی نشوونما کا نہ ہونا، غذائی قلت، دل کے سائز بڑا ہونا ،اور خون کا دباؤ جیسے مرض کی علامات ظاہر ہوتی ہیں۔
سوال: بڑے بچوں میں کس طرح کے دل کے مرض کو دیکھا گیا ہے؟
جواب: سنگ ویٹریکل ڈیسیز
سنگ ویٹریکل ایک اجتماعی اصطلاح ہے جو کہ ظاہر کرتی ہے ایسے دل کے مرض کو جس میں آکسیجن پر مشتمل خون اور کم آکسیجن خون آپس میں ایک ہی ویٹریکل میںمرکب ہوجاتے ہیں ۔
ہم نے فاسٹن میڈیکل علم کے ذریعے ایسے دل کی خرابیوں کا علاج کیا ہے اس طریقے کے ذریعے م آکسیجن خون کوپھیپھڑوں اور پلامنری(خون کو لے جانے والی نلیاں)میں بھیجا جاتا ہے۔
اکیلاویٹریکل کو پھیپھڑوں میں آکسیجن خون کو جمع کرنے کے لئے محفوظ کیا جاتا ہے اس کے بعد خون کو ایورٹا جسم کے دیگر حصوں میں پمپ کر بھیجا جاتا ہے۔
لہذا بچوں میں یہ میڈیکل طریقہ کافی مؤثر اور کارگر ثابت ہوا ہے۔
۲۔والو کی مرمت اور علاج۔اس کے تحت مرض مبتلا میٹرل،ٹرایوسیڈ اور ایوٹک والو کی مرمت اور علاج کیا جاتا ہے۔
چنانچہ دل کے مرض سے نجات دلانے کے لئے ہم رأس میڈیکل کا طریقہ استعمال کرتے ہیں خصوصی طور پر بیماری اور تباہ شدہ آئیوٹک والو(پیدائشی طور سے) کے مقام میں رأس کی میڈیکل مشق اس صورت حال میں بہت فائدہ مند ثابت ہوئی ہے۔
پتہ
گیان بھدر
مکان نمبر 5،دوسری منزل،گرودوارا کے پیچھے،
منیرکا،نئی دہلی – 110 067
موبائل – 09871208435
Email:gyanbhadra6@gmail.com

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *