ٹریک کے بعد اب ہائی وے پر اترا گوجر ریزرویشن تحریک

Share Article

 

راجستھان میں گوجر ریزرویشن تحریک پیر کو چوتھے دن بھی جاری رہا۔ سوائی مادھوپور کے ملارنا ڈونگر میں گوجر ریلوے ٹریک پر مهاپڑاو پر بیٹھے ہیں۔ ریل ٹریفک کے ساتھ اب سڑک پر بھی رکاوٹ پیدا ہو گیا۔

 

راجستھان میں گوجروں کا ریزرویشن کے لئے تحریک پیر کو چوتھے دن بھی جاری رہا۔ گوجر لیڈر ممبئی پونے ریلوے راستے پر پٹریوں پر بیٹھے رہے جس کی وجہ سے کئی اہم ٹرین منسوخ کر دی گئی یا ان کے راستے میں تبدیلی کی گئی۔ ریاست میں کئی سڑک بھی بند رہے۔گوجر لیڈر وجے بینسلا نے پیر کو ایک بار پھر دہرایا کہ حکومت کو مذاکرات کے لئے ملارنا ڈونگر میں ریل ٹریک پر ہی آنا ہوگا اور تحریک مذاکرات کے لئے کہیں نہیں جائیں گے۔ کرنل کروڑی سنگھ بینسلا اور پوری ٹیم کے ساتھ فیصلہ کریں گے۔ انہوں نے کہا، ‘بات چیت کیا کرنی ہے؟ حکومت پانچ فیصد ریزرویشن کی ہمارا مطالبہ پوری کرے اور ہم گھر چلے جائیں گے۔ ‘اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ مطالبہ نہیں مانے جانے پر گوجر طویل تحریک کے لئے تیار ہیں۔ وہیں، پولیس ڈائریکٹر جنرل (قانون) ایم ایل لاٹھر نے بتایا کہ تحریک کے دوران کہیں سے ناخوشگوار واقعہ کی کوئی خبر نہیں ہے۔اتوار کو کچھ هڑدگيو نے دھول پور میں پولیس کے تین گاڑیوں کو آگ کے حوالے کر دیا تھا اور ہوا میں گولیاں چلائیں تھیں۔

 

 

لاٹھر نے بتایا کہ مظاہرین نے دوسہ ضلع میں سکندرا کے پاس نیشنل ہائی وے نمبر 11 کے لیے جام کر دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی نےنوا (بوندی)، بڈلا (کرولی) اور ملارنا میں بھی سڑک بند رہا۔قابل ذکر ہے کہ گوجر لیڈر ریاست میں سرکاری ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں داخلے کے لئے پانچ فیصد ریزرویشن کی مانگ کو لے کر جمعہ کی شام کو سوايمادھوپر کے ملارنا ڈونگر میں ریل پٹری پر بیٹھ گئے۔ گوجر لیڈر کروڑی سنگھ بنسلا اور ان کے حامی یہیں منجمد ہیں۔ مظاہرین اور سرکاری افسران میں ہفتہ کو ہوئی بات چیت بے نتیجہ رہی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *