گجرات میں راجیہ سبھا کی دو نشستوں کے لئے الگ الگ انتخابات کرانے کے نوٹیفکیشن کے خلاف دائر درخواست پر سپریم کورٹ کل یعنی 19 جون کو سماعت کرے گا۔ درخواست گجرات کے کانگریس رکن اسمبلی پریش بھائی دھنانی نے دائر کی ہے۔
 
درخواست گزار کی جانب سے کانگریس لیڈر اور سینئر وکیل وویک تنکھانے جسٹس دیپک گپتا اور جسٹس سوریہ کانت کی ویکیشن بینچ کے سامنے اس درخواست پر جلد سماعت کا مطالبہ کیا، جس کے بعد عدالت نے کل یعنی 19 جون کو سماعت کرنے کا حکم دیا ہے۔
 
امت شاہ اور اسمرتی ایرانی کے لوک سبھا رکن بننے سے خالی ہوئی ان سیٹوں پر 5 جولائی کو الگ الگ انتخابات ہونے ہیں۔ ایسی صورت میں بی جے پی کو دونوں سیٹوں پر جیت مل جائے گی۔
 
الیکشن کمیشن کے نوٹیفکیشن کے مطابق امت شاہ کو لوک سبھا انتخابات جیتنے کا سرٹیفکیٹ 23 مئی کو ملا تھا، جبکہاسمرتی ایرانی کو 24 مئی کو ملا۔ اس سے دونوں کے انتخابات میں ایک دن کا فرق ہو گیا۔ اسی کو بنیاد بناتے ہوئے الیکشن کمیشن نے ریاست کی دونوں سیٹوں کو الگ الگ مانا ہے لیکن انتخابات ایک ہی دن ہوں گے۔
 
ایسا ہونے سے گجرات کی دونوں سیٹوں پر بی جے پی کوکامیابی مل جائے گی کیونکہ وہاں پہلے ترجیحی ووٹ از سر نوطے ہوں گے لیکن ایک ساتھ الیکشن ہوتے تو کانگریس کو ایک نشست مل جاتی۔ تعداد کے حساب سے گجرات میں راجیہ سبھا کا الیکشن جیتنے کے لئے امیدوار کو 61 ووٹ چاہئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here