گوڈسے کو حب الوطن بتانے پر نتیش برہم، پرگیہ کو بی جے پی باہرکرے

Share Article

 

مدھیہ پردیش کی بھوپال لوک سبھا سیٹ سے بی جے پی کی امیدوار پرگیہ ٹھاکر کے ناتھو رام گوڈسے کو حب الوطن بتانے والے بیان پر اب بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے لب کشائی کی ہے اور سخت اعتراض ظاہر کیا ہے۔نتیش کمار نے کہا کہ اس طرح کے بیان کو کسی طرح سے برداشت نہیں کیا جائے گا اور سادھوی کے اس بیان کے بعد بی جے پی کو انہیں پارٹی سے باہر کرنے پر غور کرنا چاہیے۔پرگیہ ٹھاکر کے بیان پر بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے کہا، ’’یہ سب ہم برداشت نہیں کر سکتے۔ بی جے پی کو انہیں باہر نکالنے پر غور کرنا چاہیے۔ یہ بی جے پی کا اندرونی معاملہ ہے لہذا ایکشن لینے کا کام بھی وہی کرے گی۔

 

انہوں نے مزید کہا، ’’ہم جرائم، بدعنوانی اور فرقہ پرستی پر بالکل سمجھوتہ نہیں کر سکتے۔ ہمارا موقف صاف ہے۔‘‘ غور طلب ہے کہ حال ہی میں پرگیہ ٹھاکر نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا ’’ناتھو رام گوڈسے حب الوطن تھے، ہیں اور رہیں گے۔ گوڈسے کو دہشت گرد قرار دینے والے خود اپنے گریبان میں جھانک کر دیکھیں۔ اب کی بار چناو? میں ایسا بولنے والوں کو جواب دے دیا جائے گا۔‘‘

 

پرگیہ کے اس بیان کے بعد بی جے پی نے باضابطہ طور پر کہا تھا کہ پرگیہ کے اس بیان کا پارٹی سے کوئی لینا دینا نہیں ہے اور یہ ان کا ذاتی بیان ہے۔ بی جے پی نے پرگیہ سے اس کے لئے معافی مانگنے کو بھی کہا تھا۔ حالانکہ بعد میں پرگیہ ٹھاکر نے اس پر معافی مانگتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اس معاملہ پر پارٹی کے موقف کے مطابق چلیں گی۔پرگیہ ٹھاکر کی اس ہرزہ سرائی پر ملک بھر میں اس کی فضیحت ہوئی۔ حزب اختلاف کی طرف سے بھی اس کے بیان کو انتہائی قابل مذمت اور ملک مخالف قرار دیا گیا۔ واضح رہے کہ پرگیہ ٹھاکر مالیگاؤں دھماکہ معاملہ میں دہشت گردی کی ملزمہ ہے اور ضمانت پر باہر ہے۔ اس کے باوجود بی جے پی کی طرف سے اسے بھوپال سیٹ سے امیدوار بنایا گیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *