دہلی کی طرف سے کرکٹ کھیل چکے گمبھیر دہلی سے لڑیں گے لوک سبھا الیکشن

Share Article

gautam-gambhir-to-join-BJP

نئی دہلی: سابق ہندوستانی کرکٹر گوتم گمبھیر اب کرکٹ کا میدان چھوڑ کر سیاسی اننگز کھیلنے کے لیے تیار ہیں۔ خبر ہے کہ وہ اس لوک سبھا انتخابات میں دہلی سے انتخابی میدان میں سیاسی اننگ کی شروعات کریں گے، ان کے قریبی نے اٹکل بازیوں پر روک لگاتے ہوئے جمعہ کو ایک نیوز پر یہ جانکاری دی ہے۔گمبھیر کے قریبی نے بتایا کہ یہ تقریبا طے ہے کہ گمبھیر نئی دہلی لوک سبھا حلقہ سے بی جے پی کے ٹکٹ پر تال ٹھوکیں گے۔ گمبھیر نے اس کے لئے من بنا لیا ہے اور اب آخری فیصلہ بی جے پی کو کرنا ہے۔

دہلی رنجی ٹیم کے سابق کپتان گمبھیر قوم پرستی اور فوج کے مسئلے پر کافی سنجیدہ رہتے ہیں اور اس بار کا الیکشن بھی قوم پرستی کے ارد گرد ہی گھومیگا۔ 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی نے دہلی کی تمام سات سیٹوں پر جیت درج کی تھی۔ بی جے پی ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی کو لگ رہا ہے کہ اس بار اسے دارالحکومت کی کچھ سیٹوں پر اقتدار مخالف لہر کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ایسے میں وہ ونر امیدواروں پر داؤ لگانا چاہتی ہے۔اس وقت نئی دہلی سیٹ سے سپریم کورٹ کی وکیل میناکشی لیکھی بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ہیں۔

گمبھیر کے قریبی نے کہا کہ گمبھیر دہلی سے ہی ہیں، اس لیے وہ لوک سبھا انتخابات یہیں سے لڑنے کے خواہش مند ہیں۔ دہلی میں سات نشستیں ہیں، لیکن ان میں سے نئی دہلی گمبھیر کو زیادہ سوٹ کرتی ہے۔حالانکہ گمبھیر کے قریبی نے کہا کہ کرکٹ کی پچ سے سیاست کے میدان میں اترنا اتنا آسان نہیں ہے۔ اس کو لے کر ہم لوگ کافی دنوں سے غوروفکر کر رہے ہیں۔ اب دیکھنا یہ ہوگا کہ گمبھیر کو لے کر بی جے پی کب اعلان کرتا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *