بزرگ کے مساج کے بدلے مانگے 27 کروڑ کیش، لڑکی سمیت 4 گرفتار

Share Article
gang-puts-filmmakers
ممبئی:ممبئی پولیس نے ایک لڑکی سمیت چار افراد کو گرفتار کیا ہے، الزام ہے کہ یہ تمام لوگ ایک فلم پروڈیوسر کے باپ کا فحش ویڈیو بنانے کے بعد انہیں بلیک میل کر رہے تھے۔ گرفتار ملزمان نے ویڈیو کلپ کے بدلے فل پروڈیوسر سے تقریباً 27 کروڑ روپے کی مانگ کی تھی۔ جس کے بعد انبولی پولیس نے بالی ووڈ پرڈیوسر سے پیسے اینٹھنے کے الزام میں 5 افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔
filmmakers-1
پولیس کے مطابق فل پروڈیوسر انیل سندھی کے باپ دھن راج سندھی پارکنسن بیماری میں مبتلا ہیں، جس کے بعد ڈاکٹروں نے انہیں مسلسل مساج کرانے کی صلاح دی، جس کے بعد ان کے بیٹے نے ایک لکی مشرا نام کی خاتون کو باپ کے مساج کے لئے ٹھیک کیا۔ خاتون نے اکتوبر کے بعد تقریباً تین چار ماہ ان کا مساج کیا اور کام چھوڑ دیا۔
ویڈیو وائرل کرنے کے نام پر مانگے 27 کروڑ
filmmakers-2

لیکن ایک دن جنوری ماہ میں فلم پروڈیوسر انیل سندھی کو ایک فون آیا۔ فون کرنے والے نے اپنا نام راہل شکلا بتایا اور کہا کہ وہ ایک یوٹیوب چینل میں کام کرتا ہے،اس نے کہا کہ اس کے پاس انیل کے والد کی ایک پارن گرافی کلپ ہے، جو اس عورت کے ساتھ ہے جو ان کے مساج کے لئے ان کے گھر آتی تھی۔ اس کے بعد شکلا نام کے اس شخص نے کلپ ڈیلیٹ کرنے کے بدلے ان سے 25 کروڑ روپے کا مطالبہ کیا، ساتھ یہ بھی دھمکایا کہ اگر انہیں اتنی بڑی رقم نہیں دی گئی تو وہ کلپ لیک کر دے گا۔ اس کے بعد پروڈیوسر ڈر گئے اور انہوں نے کالر کو مل کر پانچ لاکھ روپے بھی دیے، لیکن ان کی مانگ ختم نہیں ہوئی۔ پریشان ہوکر فلم پروڈیوسر نے اس کی شکایت ممبئی پولیس سے کر دی۔ اس کے بعد پولیس نے جال بچھا کر جمعرات کو انہیں 5 لاکھ کی دوسری انسٹال منٹ لینے پہنچے تمام پانچ ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا۔

filmmakers-3
ایڈیشنل کمشنر منوج شرما نے بتایا کہ، پانچوں گرفتار ملزمان کی شناخت لکی، حسین مکرانی، یوراج چوہان، رحمان شیخ اور کول رام کمار کے طور پر ہوئی ہے، ان کے خلاف آئی پی سی اور آئی ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہوا ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *