ادھار کا سرنیم لینے سے کوئی گاندھی نہیں ہوتا: گری راج سنگھ

Share Article

 

مقامی رہنما اور مرکزی وزیر گری راج سنگھ نے ہفتہ کے روز گاندھی خاندان پر زوردار حملہ بولا ہے۔ گری راج سنگھ نے ٹویٹ کیا کہ ادھار کا سرنیم لینے سے کوئی گاندھی نہیں ہو سکتا۔

ہفتہ کے روز دہلی میں منعقد ہ بھارت بچائو ریلی میں ریپ ان انڈیا والے بیان پر معافی کے مطالبے پر راہل گاندھی نے کہا کہ میرا نام راہل ساورکر نہیں ہے، میں کبھی معافی نہیں مانگوںگا۔ راہل گاندھی کے اس بیان پر مرکزی وزیر گری راج سنگھ نے ٹویٹ کر ویر ساورکر کو سچا محب وطن بتایا ہے۔ ہفتے کی دوپہر کئے گئے ٹویٹس میں گری راج سنگھ نے لکھا ہے کہ ویر ساورکر تو سچے محب وطن تھے۔ ادھار کا سرنیم لینے سے کوئی گاندھی نہیں ہوتا، کوئی محب وطن نہیں بنتا۔ محب وطن ہونے کے لئے رگوں میں خالص ہندوستانی خون چاہئے۔ بھیس بدل کر بہتوں نے ہندوستان کو لوٹا ہے۔ اب یہ نہیں ہو گا۔ انہوں نے سونیا گاندھی، راہل گاندھی اور پرینکا گاندھی کی تصویر کوشیئر کرتے ہوئے پوچھا ہے کہ یہ تینوں کون ہیں؟ کیا یہ تینوں ملک کے عام شہری ہیں؟۔

قابل ذکر ہے کہ جمعہ کے روز بھی گری راج سنگھ نے ٹویٹ کر کہا تھا کہ چانکیہ کی فکر آج کے وقت میں بہت ہی موزوں ہے۔ دو ہزار سال پہلے چانکیہ نے کہا تھا کہ غیر ملکی ماں سے پیدا اولاد کبھی محب وطن نہیں ہو سکتی اور اس کی مثال ہم لوگ دیکھ رہے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *