شعبہ اردو دہلی یونیورسٹی میں ’غالب اور عہدِ غالب‘ کی رسمِ رونمائی 

Share Article
نئی دہلی:غالب انسٹی ٹیوٹ کے زیرِاہتمام شعبہ اردو دہلی یونیورسٹی کے تعاون سے غالب انسٹی ٹیوٹ کی اہم ترین تصنیف’’غالب اور عہدِ غالب‘‘ کی رسم رونمائی 26جولائی صبح11بجے دہلی یونیورسٹی کے خواجہ احمد فاروقی میموریل لائبریری میں کی جائے گی۔ اس موقع پر ’’غالب اور عہدِ غالب‘‘ کے موضوع پر ایک مذاکرے کا بھی اہتمام کیاگیا ہے۔اس جلسے میں پروفیسر صدیق الرحمن قدوائی، سکریٹری غالب انسٹی ٹیوٹ صدارتی فریضے کو انجام دیں گے اور شعبہ اردو دہلی یونیورسٹی کے صدر پروفیسر ابنِ کنول کی استقبالیہ گفتگو سے جلسے کا آغاز ہوگا۔ غالب انسٹی ٹیوٹ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر سید رضاحیدر کتاب کا تعارف پیش کریں گے۔ ڈاکٹر علی جاوید، ڈاکٹر محمد کاظم، ڈاکٹر ابوبکر عباد، ڈاکٹر علی اکبرشاہ اورڈاکٹر شاذیہ عمیر موضوع کے تعلق سے اپنے خیالات کا اظہار کریں گے۔

 

’’غالب اور عہدِ غالب‘‘ کی پہلی اشاعت2012ء میں ہوئی تھی جس کی رسمِ رونمائی کا فریضہ سابق نائب صدرِ جمہوریہ حامد انصاری نے اپنے دستِ مبارک سے انجام دیاتھا۔ ’’غالب اور عہدِ غالب‘‘میں اُن تمام تاریخی تصاویر کا اردو اور انگریزی میں تفصیلی تعارف ہے جو تصاویر غالب، اُن کے معاصرین، اٹھارہ سوستاون کی جنگ آزادی، عہدِ غالب کی عمارتیں، اور غالب کی زندگی سے وابستہ اہم چیزوں کو پیش کرتی ہیں۔ اس کتاب کی طباعت میں خاص طورپرمشرق وسطیٰ وایرانی طرزِ طباعت اور آرٹ کوپیش کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ آرٹ پیپرپرچھپی اس کتاب کو پروفیسر صدیق الرحمن قدائی، شاہد ماہلی اور ڈاکٹر سیدرضاحیدرنے تحریرکیا ہے۔بین الاقوامی سطح پر اس کتاب مقبولیت کی وجہ سے اس کادوسرا ایڈیشن غالب انسٹی ٹیوٹ نے شائع کیا ہے جس کی رسم رونمائی کے لئے شعبہ اردو دہلی یونیورسٹی نے میزبانی قبول کرکے غالب انسٹی ٹیوٹ کو شکریے کا موقع دیا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *