شاہ رخ خان کے خلاف کارروائی، آئی ٹی محکمہ بیعنامی پراپرٹی معاملہ کی جانچ کرے گی

Share Article

shah-rukh-khan

اپنے کیریئر کے سب سے برے دن سے گزر رہے کنگ خان کے لئے ان دنوں سب کچھ ٹھیک نہیں چل رہا ہے۔ آئی ٹی محکمہ نے عدالتی اتھارٹی کے اس فیصلے کو چیلنج کیا ہے جس میں شاہ رخ خان پر بیعنامی پراپرٹی کے الزام کو مسترد کر دیا تھا۔ گمنامی پراپرٹی کے الزام میں کنگ خان پر کیس درج کیا گیا تھا۔ اس وقت اسسٹنٹ اتھارٹی نے تفتیش کے بعد شاہ رخ خان کے خلاف الزام مسترد کر دیئے تھے۔ اس کے بعد یہ معاملہ محکمہ انکم ٹیکس نے اپنے ہاتھ میں لے لیا اور تحقیقات شروع کر فیصلے کو چیلنج کیا۔

انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ نے گزشتہ سال شاہ رخ خان کے علی باغ کے بنگلے کو سیز کیا تھا۔ سال 2016 میں بیعنامی پراپرٹی قانون (Benami Property Act ) کے تحت بیعنامی املاک کو سیز کیا گیا تھا، لیکن اسسٹنٹ اتھارٹی نے انکم ٹیکس کے معاملے کو مسترد کر دیا تھا اور شاہ رخ خان کو راحت دے دی تھی، لیکن اس معاملے کو انکم ٹیکس نے پھر چیلنج کیا ہے اور بیعنامی اپلیٹ ٹریبونل میں جو حال میں پی ایم ایل اے اتھارٹی میں آئی ٹی محکمہ نے چیلنج کیا۔ گزشتہ ماہ اس پورے معاملے کو چیلنج کیا گیا ہے۔

شاہ رخ پر الزام ہے کہ انہوں نے اس زمین کو زراعت کے مقصد سے خریدا لیکن بعد میں فارم ہاؤس بنا دیا۔ بیعنامی پراپرٹی قانون میں تبدیلی کے بعد یہی فارم ہاؤس اب جانچ کے گھیرے میں ہے۔

سال 2016 میں بیعنامی پراپرٹی معاملے میں کچھ تبدیلی کی گئی تھی، ان تبدیلیوں کے بعد شاہ رخ خان اس میں پھنسنے والے سب مشہور شخصیت ہیں۔ بیعنامی جائیداد میں جو تبدیلی کی گئی ہیں اس کے مطابق اگر کوئی شخص بیعنامی پراپرٹی معاملے میں قصوروار پایا جاتا ہے تو اسے7 سال کی سزا ہو سکتی ہے، یہاں تک کی اسی بیعنامی جائیداد کی مارکیٹ قدر کے حساب سے 25 فیصد جرمانہ بھی لگ سکتا ہے۔

اس کے ساتھ ہی بیعنامہ کرنے والے اور جسے فائدہ پہنچا دونوں کو سزا دیے جانے کا التزام ہے۔ معلومات کے مطابق مہاراشٹر کے ڈپٹی کمشنر 87 پراپرٹی کے بارے میں جاننا چاہتے تھے جن پر کوسٹل ریگولیشن قانون کی خلاف ورزی کا الزام ہے۔ انہی 87 پراپرٹی میں سے ایک شاہ رخ خان کا فارم ہاؤس بھی ہے۔ مہاراشٹر ٹی این سی اور ایگریکلچر لینڈس ایکٹ کے تحت قابل کاشت ان زمینوں کو غیر زراعت کام کے لئے ٹرانسفر نہیں کیا جا سکتا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *