آدتیہ سنگھ قتل میں ایس پی کے سابق ضلع صدر کو جیل بھیجا گیا

Share Article

 

سرخیوں میں رہے آدتیہ سنگھ قتل معاملے میں جمعرات کے روز پولیس نے ایس پی کے سابق ضلع صدر اور اسمبلی انتخابات میں امیدوار رہے آر پی یادو کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے۔ ان پر قاتلوں کو تحفظ اور ثبوتوں کومٹانے کا الزام ہے۔

پولیس ایس پی لیڈر کو تین دن پہلے ہی حراست میں لے کر پوچھ گچھ کر رہی تھی۔ اپنے لیڈر کی گرفتاری کے بعد سے سماجوادی پارٹی کے کارکنوں میں بے حد غصہ ہے۔ بدھ کے روز حراست میں سینکڑوں ایس پی کارکنوں نے پولیس لائن میں جمع ہو کر اپنے لیڈر کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔ سماج وادی پارٹی کے ضلع صدر نے بھی پولیس کے اوپر کارکنوں کے ظلم و ستم کا الزام لگایا تھا۔ گرفتاری کے پہلے آر پی یادو نے اپنے قتل کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے بی جے پی ایم ایل سی دنیش سنگھ اور کانگریس ممبر اسمبلی ادیتی سنگھ پر سنگین الزام لگائے تھے۔

غور طلب ہے کہ گزشتہ 10 اکتوبر کو ڈی فارما کے طالب علم آدتیہ سنگھ کا قتل کر دیا گیا تھا اورلاش سڑک کے کنارے پائی گئی تھی۔ معاملے میں پولیس کی تحقیقات میں شہر کے نامی ڈھابا مالک اور دوسرے لوگوں کا نام آیا تھا جس میں تقریباً تمام ملزمان کی گرفتاری بھی ہو چکی ہے۔ اس معاملے میں لاپرواہی برتنے پر چار پولیس اہلکاروں کو معطل بھی کیا گیا تھا۔ جمعرات کے روز ایس پی کے سابق ضلع صدر کی گرفتاری کے بعد معاملے نے سیاسی طور لے لیا ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ سوپنل ممگائی کا کہنا ہے کہ تمام پہلوؤں سے تحقیقات کی جا رہی ہے اور کسی مجرم کو بخشا نہیں جائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *