چارہ گھوٹالہ: لالو یادو کو ملی ضمانت، پاسپورٹ جمع کرنے کا حکم

 

راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو یادو کو رانچی ہائی کورٹ سے ضمانت مل گئی ہے۔ دیوگھر خزانے صورت میں سزا کی آدھی مدت گزرنے کو بنیاد بنا کر لالو کی جانب سے ضمانت کی درخواست دائر کی گئی تھی۔

 

راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے صدر لالو یادو کو رانچی ہائی کورٹ سے ضمانت مل گئی ہے۔ دیوگھر خزانے صورت میں سزا کی آدھی مدت گزرنے کو بنیاد بنا کر لالو کی جانب سے ضمانت کی درخواست دائر کی گئی تھی۔ اس پر سماعت کرتے ہوئے رانچی ہائی کورٹ نے لالو یادو کو 50-50 ہزار کے مچلکے پر ضمانت دے دی۔ اس کے ساتھ ہی عدالت نے لالو کو پاسپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

چارہ گھوٹالہ معاملے میں گزشتہ دنوں 5 جولائی کو سماعت ہوئی تھی، لیکن لالو پرساد یادو کو رانچی ہائی کورٹ سے راحت نہیں دی تھی۔ لالو یادو نے ضمانت کے لئے عرضی دائر کی تھی، جس پر ہائی کورٹ نے کیس کی سماعت کے لئے اگلی تاریخ 12 جولائی مقرر کی تھی۔ لالو یادو چارہ گھوٹالہ معاملے میں رانچی کی ایک جیل میں بند ہیں۔

اس سال 29 مئی کو رانچی کی ایک خصوصی عدالت نے کروڑوں روپے کے چارہ گھوٹالہ معاملے میں 16 ملزمان کو قصوروار ٹھہرایا تھا اور انہیں تین کو چار سالوں کی سزا سنائی۔ ایس این مشرا کی خصوصی سی بی آئی عدالت نے چائی باسا ٹریجری سے دھوکا کرکے 37 کروڑ روپے نکالنے کے معاملے میں 16 افراد کو مجرم ٹھہرایا تھا۔ عدالت نے ان میں سے 11 افراد کو تین سال اور پانچ دیگر کو چار سال کی سزا سنائی۔

سی بی آئی کی خصوصی عدالت نے بہار کے سابق وزرائے اعلی لالو پرساد یادو اور جگن ناتھ مشرا کو اسی صورت میں 2013 میں مجرم ٹھہرایا تھا۔ سی بی آئی نے بعد میں 16 دیگر کے خلاف چارج شیٹ داخل کیا تھا۔ ان میں سے 14 چارے کی سپلائی کرتے تھے اور دو سرکاری افسر تھے۔ سی بی آئی کی عدالت نے چارہ گھوٹالے سے منسلک 42 معاملات میں اپنا فیصلہ سنایا دیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *