gujrat-voters
گجرات اسمبلی انتخابات میں پہلے مرحلے کی 19ضلعوں کی89سیٹوں پر9دسمبر کو پرامن طریقے سے68فیصد ووٹنگ ہوئی ہے۔اس کے ساتھ ہی 977امیدواروں کی قسمت الیکٹرونک ووٹنگ مشین(ای وی ایم)میں قیدہوگئی ہے۔کچھ پولنگ بوتھوں پرای وی ایم کے بلوٹوتھ سے کنیکٹ کرنے کی شکایت بھی ملی۔حالانکہ الیکشن کمیشن نے اس الزاموں کوخارج کردیا۔الیکشن کمیشن کے مطابق،پہلے مرحلے میں کل 68فیصدووٹنگ ہوئی ہے۔
ریاست میں پہلی بارای وی ایم کے ساتھ ووٹ ویریفیکیشن پیپرآڈٹ مشین(وی وی پیٹ)کااستعمال کیاگیا۔
کانگریس کی طرف سے پوربندر میں تین بوتھوں پر ای وی ایم کے بلیو ٹوتھ سے منسلک ہونے کی شکایت پر جانچ کے بعد پایا گیا کہ ایک امیدوار کے پولنگ ایجنٹ کے پاس موجود فون کے بلیو ٹوتھ کھلا رہنے کی وجہ سے یہ گڑبڑی ہوئی۔ آمود حلقہ میں ایک ووٹر نے اس کا ووٹ دوسرے امیدوار کے حق میں جانے کی شکایت کی۔
کانگریس نے الیکشن کمیشن سے کئی شکایتیں کی ہیں۔ ان میں وزیر اعلی وجے روپانی کو جو خود بھی امیدوار ہیں کے ووٹ ڈالنے کے دوران احمد آباد میں پریس کانفرنس کرکے مثالی ضابطہ اخلاق کی خلا ف ورزی کرنے کی شکایت کی گئی۔ چیف الیکٹورل افسر نے کہا کہ تمام شکایتوں کی جانچ کی جا رہی ہے۔ووٹنگ کیلئے 24,689بنائے گئے تھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here