دہلی میں کسانوں کا آندولن ختم

Share Article
kisan
’کسان کرانتی یاترا‘ لیکردہلی پہنچے ہزاروں کسانوں نے آخرکار اپنا مارچ واپس لے لیا۔بدھ کوکسان لیڈر نریش ٹکیٹ نے اس کا اعلان کیا۔مارچ ختم ہونے کے بعد کسان اپنے اپنے گاؤں لوٹنے لگے ہیں۔منگل کی دیررات کسان مارچ کودہلی میں انٹری دی گئی تھی۔انٹری کے بعد یہ سبھی سیدھے کسان گھاٹ پہنچے اوروہاں جاکر ہڑتال ختم کردی ۔سابق وزیراعظم اورکسان لیڈر چرن سنگھ کے اسمارک کسان گھاٹ پہنچے کسانوں نے اپنے آندولن واپس لینے کا اعلان کیا۔بھارتیہ کسان یونین کے صدر نریش ٹکیٹ نے کہاکہ 23ستمبرکوشروع ہوئی ’کسان کرانتی یاترا‘ کسان گھاٹ پہنچ کرختم ہوگئی ہے۔چونکہ دہلی پولس نے ہمیں راجدھانی میں گھسنے کی اجازت نہیں دی تھی اس لئے ہم نے مظاہرہ کیا تھا۔ہمارامقصد یاتراکو ختم کرنے کا تھا جواب پورا ہوا ۔اب ہم اپنے گاؤں جائیں گے۔
دہلی -این سی آرکے لوگوں کے لئے راحت کی خبرہے۔کسانوں نے اپنا آندولن ختم کردیاہے۔ سارے کسان دہلی یوپی بارڈر سے راحت میں ہی پہلے کسان گھاٹ آئے اوراس کے بعداب کسان گھاٹ سے آندولن ختم کرکے گھرلوٹ رہے ہیں۔این ایچ 24کودونوں گاڑیوں کیلئے کھول دیا گیاہے۔آمدورفت معمول پرہے۔حالانکہ کسانوں کی سڑکوں پرآمدورفت دھیان میں رکھتے ہوئے غازی آباد کے اسکولوں کوبند رکھنے کا انتظامیہ نے فیصلہ کیاہے۔کسانوں کے گزرنے والے مقامات پراحتیاطاً پولس گہری نظررکھے ہوئے ہیں۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *