مشہور وکیل رام جیٹھ ملانی کا 95 سال کی عمر میں انتقال، اہم شخصیات نے تعزیت کا اظہار کیا

Share Article

 

نئی دہلی، سپریم کورٹ کے سینئر وکیل اور سابق مرکزی وزیر قانون رام جیٹھ ملانی کا 95 سال کی عمر میں انتقال ہو گیا۔ وہ طویل عرصے سے بیمار تھے۔انہوں نے اتوار کی صبح دہلی میں واقع اپنی رہائش گاہ پر آخری سانس لی۔ ان کے بیٹے مہیش جیٹھ ملانی نے بتایا کہ آج شام لودھی روڈ کے شمشان گھاٹ پر ان کی آخری رسومات ادا کی جائیں گی۔صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند، نائب صدر وینکیا نائیڈو، وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ امت شاہ، وزیر قانون روی شنکر پرساد اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے رام جیٹھ ملانی کی موت پر غمکا اظہارکیا ہے۔

Image result for ram jethmalani

صدرکووند نے اپنے تعزیتیپیغام میں کہا کہ’رام جیٹھ ملانی کا انتقال میرا ذاتی نقصان ہے۔ میں نے اپنا دوست اور قریبی ساتھی کھو دیا ہے۔ایشور ہم سب کو اس دکھ کوبرداشت کرنے کا صبر دے‘۔ نائب صدر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ’سابق مرکزی وزیر، ایک قانونی معجزہ اور ہندوستان کی باصلاحیت ذہانت میں سے ایک تھے۔ رام جیٹھ ملانی کے انتقال کے بارے میں جان کر گہرا دکھ ہوا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنیتعزیتی پیغام میں کہا کہ’رام جیٹھ ملانی جی کے انتقال سے، ہندوستان نے ایک غیر معمولی وکیل اور مایہ ناز عوامی شخصیت کو کھو دیا۔ ایمرجنسی کے سیاہ دنوں کے دوران، ان کی آزادی اور عوامی آزادی کے لئے جنگ کو یاد کیا جائے گا۔ رام جیٹھ ملانی نے عدالت اور پارلیمنٹ دونوں میں بھرپور کردار ادا کیا ہے۔

Image result for ram jethmalani

رام جیٹھ ملانی فی الحال راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) سے راجیہ سبھا رکن تھے۔ جیٹھ ملانی ایک مشہور وکیل اور سیاستدان تھے۔ وہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے ممبئی میں دو بار ایم پی رہے۔ بعد میں اٹل بہاری واجپئی کی حکومت میں مرکزی وزیر قانون اور شہری ترقی کے وزیر بنے۔ اگرچہ تنازعہ کی وجہ سے انہیں پارٹی سے نکال دیا گیا۔ اس کے بعد 2004 میں لکھنؤ سے اٹل بہاری واجپئی کے خلاف الیکشن لڑے لیکن ہار گئے تھے۔ 7 مئی 2010 ء کو انہیں سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کا صدر منتخب کیا گیا۔ 2010 میں جیٹھ ملانی کو دوبارہ سے بی جے پی میں شامل کر لیاگیا اور راجستھان سے راجیہ سبھا ممبر بنایا گیا۔

Image result for ram jethmalani

جیٹھ ملانی ہائی پروفائل مقدمے کی پیروی کرنے کی وجہ سے متنازعہ رہے اور اس کے لئے انہیں کئی بار سخت تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑا۔ وہ اپنے وقت کے سب سے مہنگے وکیل مانے جاتے تھے۔ اس کے باوجود انہوں نے بہت سے معاملات میں مفت پیروی کی۔ جیٹھ ملانی کے اہم مقدمات میں ناناوتی بمقابلہ مہاراشٹر حکومت، سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کے قاتلوں ستونت سنگھ اور بے انت سنگھ، ہرشد مہتا اسٹاک مارکیٹ گھوٹالہ، حاجی مستان ، حوالہ مقدمہ، مدراس ہائی کورٹ، افضل گرو، جیسکا لال قتل مقدمہ وغیرہ شامل ہیں۔

Image result for ram jethmalani

رام جیٹھ ملانی کی پیدائش 14 ستمبر 1923 کو متحدہ ہندوستان کے شکارپور شہر میں ہوئی تھی۔یہ شہر فی الحال پاکستان کے سندھ صوبے میں ہے۔ ان کی پیدائش بھولچند گرومکھ داس جیٹھ ملانی اور ان کی بیوی پاروتی بھولچند کے یہاں ہوئیتھی۔اسکول کی تعلیم کے دوران دو دو کلاس ایک سال میں پاس کرنے کی وجہ سے انہوں نے 13 سال کی عمر میں میٹرک پاس کر لیا۔ جیٹھ ملانی نے محض 17 سال کی عمر میں وکالت کی ڈگری حاصل کر لی تھی۔ تب قوانین میں ترمیم کر کے انہیں 18 سال کی عمر میں پریکٹس کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔ اگرچہ اصولوں کے مطابق پریکٹس کی عمر 21 سال مقرر تھی۔ بعد میں انہوں نے ایس سی ساہنی لاء کالج، کراچی سے ایل ایل ایم کی ڈگری حاصل کی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *