اجودھیا فیصلے غیر واضح اور افسوسناک، نظر ثانی کی درخواست حق بجانب: پروفیسر قادر

Share Article

 

انڈین یونین مسلم لیگ کے وفد کی سونیا گاندھی سے ملاقات،قومی امور پر تبادلہ خیال

نئی دہلی :انڈین یونین مسلم لیگ کا ایک اعلیٰ سطحی وفد آج کانگریس کی صدر سونیا گاندھی سے ان کے گھر پر ملا اور زائد از قومی امور پر تبادلہ خیال کے دوران اس بات پر زور دیا کہ فرقہ پرست طاقتوں کے نفرت انگیز عزائم سے ملک کو بچانے اور کانگریس کی قیادت میں سیکولر طاقتوں کو منظم کرنے میں یو پی اے سرگرم کردار ادا کرے۔وفد کے قائداور مسلم لیگ کے قومی صدر پروفیسر قادر محی الدین نے بتایا کہ اس ملاقات میں اجودھیا فیصلے ، کشمیر کے معاملے ، اقتصادی امور اور دلتوں اور اقلیتوں کی خستہ حالی پر تشویش ظاہر کی گئی۔

 

انہوں نے کہا کہ محترمہ نے قومی امور پر مسلم لیگ اور کانگریس کی دہائیوں سے چلے آرہی مفاہمت کی تائید کی۔پروفیسر قادر نے اجودھیا فیصلے کو غیر واضح اور افسوسناک بتایا اور کہا کہ نظر ثانی کی درخواست اسی سب سے داخل کی گئی ہے۔کشمیر کے تعلق سے بھی انہوں نے اس بات پر افسوس ظاہر کیا کہ کشمیریوں کو ان کے گھر میں درانداز سمجھا جا رہا ہے۔اس ملاقات میں لیگ کے وفد میں مسٹر پی کے کنہالی کٹی، ای ٹی محمد بشیر، پی وی عبدالوہاب سمیت دہلی پردیش صدر مولانا نثار احمد نقشبندی ،عمران اعجاز جنرل سکریٹری ،مدثر الحق ،شہزااحمد یوتھ کنوینر ،اتیب خان ،ایم ایسفیصل کنوینر،قومی سکریٹری خرم عمر انیس وغیرہ شامل تھے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *