اورائی اسمبلی حلقہ میں ترقیاتی کام نہ ہونے کی وجہ سے پوراعلاقہ پسماندگی کی تصویر بنا ہوا ہے: آفتاب عالم

Share Article

 

اورائی اسمبلی حلقہ گھنشیام پور بیسی اردو میڈیل اسکول میں 200طلبہ وطالبات کو پڑھانے کے لیے ایک استاد ہیں وہ بھی ہندی زبان کے۔

 

مظفرپورضلع کااورائی اسمبلی حلقہ تمام بنیادی سہولیات سےمحروم ہے علاقہ میں اسپتال پکی سڑک اسکلول بجلی اور پینے کا صاف پانی کی سہولت میسرنہیں ہے ان خیالات کا اظہار مشہورومعروف سماجی رہنما انصاف منچ بہار کے نائب صدر آفتاب عالم نےکیا انہوں نے مذید کہاکہ ریاستی حکومت دوردراز علاقہ جات میں سڑکوں کاپل کاجال بچھاکرآمدورفت کی سہولیات فراہم کےدعوےکررہی ہےوہیں دوسری طرف اورائی اسمبلی حلقہ میں ان دعووں کی نفی کررہاہے جہاں کےہزاروں لوگ یومیہ اپنے گاؤں سے اورائی یاضلع ہیڈکوارٹر پہنچنے کے لیے چچری پل یاخشتہ حال سڑک پرسفرکرنے پرمجبورہیں آفتاب عالم نے کہا کہ اورائی اسمبلی حلقہ کے 26مقامات پر پل نہ ہونےکی وجہ سےلوگوں کو مشکلات کاسامنا کرناپررہاہے مقامی لوگوں نے اس علاقے پل کی تعمیر کےلیے انتظامیہ کے نمائندوں سےلیکر وزیر اعلی نتیش کمار ومرکزی وزراء کےسامنے کئی بار اپنی مانگ کورکھا لیکن اس کےباوجود مانگ پر انتظامیہ نے کوئی توجہ نہیں دی آفتاب عالم نے کہاکہ اورائی اسمبلی حلقہ ترقیاتی کام نہ ہونے کی وجہ سے پوراعلاقہ غربت افلاس اورپسماندگی کی تصویر بناہواہے انہوں نے اس علاقہ کے تعلیمی پسماندگی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم کسی بھی قوم ملک اورعلاقہ کی ترقی میں اہم رول اداکرتی ہے۔

یہی وجہ ہے کہ طلبہ کواسکول کی جانب راغب کرنے کے لیے اسکلول کوپرکشش بنایاجاتاہے تاکہ طلبہ اسکول کی جانب راغب ہوں اور ملک وقوم کےمعیار تعلیم کوبلند کیاجائے لیکن اس کےبرعکس اورائی کے اردو وہندی سرکاری اسکولوں میں تمام بنیادی سہولیات کافقدان ہے یہی وجہ ہے کہ علاقے کے غریب تعلیم سے محروم ہیں ریاستی حکومت تعلیم کوبہتر بنانے کے لیے متعدد اقدامات کادعوی کرتی ہے لیکن حکومت کایہ دعوی اورا ئی علاقہ کے اسکولوں کی بدحالی کودیکھ کرکھوکھلا نظر آتا ہے انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہاکہ اورائی گھنشیام پوربیسی اردو میڈیل اسکلول میں 200طلبہ وطالبات زیرتعلیم ہیں ان 200طلبہ کےلیے صرف دوکمرے ہیں علاوہ ازیں اسکلو میں صرف ایک استاد ہیں وہ بھی ہندی زبان کے جن پران تمام طلبہ وطالبات کو پڑھانے کی ذمہ داری ہے اسکلول میں نہ تو طلبہ کے بیٹھنے کے لیے معقول بندوبست ہے اور نہ لوازمات سے فراغت کے لیے کوئی انتظام ہے وہیں اس علاقہ میں جرائم پیشوں کے حوصلے ساتویں آسمان پر ہے یومیہ قتل ڈاکہ زنی چوری جیسے سنگین حادثات کو بدمعاش انجام دے رہی ہے لیکن مقامی پولیس جرائم پر قدغن لگانے میں پوری طرح ناکام ثابت ہو رہی ہے لیکن اس علاقہ کے ممبر اسمبلی وایم پی خاموش تماشائی بنےہوئے ہیں جس سے عوام میں انتظامیہ وریاستی حکومت حلقہ کے ممبراسمبلی وایم پی کے خلاف غم و غصہ پایاجارہاہے وہیں کٹرہ بلاک کے ڈمری گاؤں میں پل کی تعمیر کے لیے آفتاب عالم کی تحریک پر سی پی ایم ایل بہار کے ممبر اسمبلی سداماپرساد نے اسمبلی کےاندر ریاستی حکومت سے مطالطہ کیاہےکہ ڈمری گاؤں میں جلد ازجلد پل کی تعمیر کرائی جائے ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *