عراقی وزارت دفاع نے بغداد میں متعین ایرانی سفیر کے اس بیان کو مسترد کر دیا ہے جس میں انہوں نے دھمکی دی تھی کہ ایران پر حملے کی صورت میں عراق میں موجود امریکی فوج کو نشانہ بنایا جائے گا۔وزارت کے ترجمان میجر جنرل تحسین الخفاجی کہا کہ ہم اپنے ملک کو تنازعات کی وجہ سے عالمی طاقتوں کے درمیان جنگ کا میدان نہیں بننے دیں گے۔الخفاجی نے کہا کہ عراق نے ایران یا امریکہ کی طرف سے دی جانے والی دھمکیوں کو مسترد کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ’عراقی سر زمین ایک سرخ لکیر ہے اور ہم کسی کے خلاف اس کے استعمال کی اجازت نہیں دیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ ’عراق سے ایران پر حملہ نہیں کیا جائے گا اور نہ ہی وہ اپنی سرزمین پر امریکی مفادات کو خطرے میں ڈالنے کی اجازت دے گا۔ وزارت نے زور دے کر کہا کہ عراق ہمسایہ ممالک پر حملے میں اپنی سرزمین کے استعمال کی اجازت نہیں دے گا۔
خیال رہے کہ حال ہی میں بغداد میں ایران کے سفیر ایرج مسجدی نے دھمکی دی تھی کہ اگر ایران پر امریکہ نے حملہ کیا تو عراق یا کسی اور جگہ پر امریکی افواج کو جوابی حملوں کا نشانہ بنایا جائے گا۔عراق میں امریکی موجودگی کے حوالے سے ایرانی سفیر نے بتایا کہ ان کے ملک عراقی وزیر اعظم عادل عبد المہدی سے امریکیوں کو عراق سے نکالنے کے لیے کہا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here