ہندوستان کو لگا جھٹکا، مسعود اظہر کو گلوبل ٹریرسٹ اعلان کرنے میں ایک بار پھر چین بنا رکاوٹ

Share Article

masood-azhar

پاکستانی دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے سرغنہ مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کی ہندوستان کی کوشش کو ایک اور جھٹکا لگا ہے۔ دراصل، چین نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اس عالمی دہشت گرد قرار دینے والی تجویز پر تکنیکی روک لگا دی۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی ’ 1267 القاعدہ سینکشنس کمیٹی ‘ کے تحت مسعوداظہر کو دہشت گرد قرار دینے کی تجویز 27 فروری کو فرانس، برطانیہ اور امریکہ نے لائی تھی۔

غور طلب ہے کہ 14 فروری کو جموں و کشمیر کے پلوامہ میں جیش محمد کے فدائین نے سی آر پی ایف کے قافلے پر حملہ کیا تھا، جس میں 40 جوانوں کی موت ہو گئی تھی۔ اس حملے کی وجہ سے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان کشیدگی پیدا ہو گئی تھی۔

کمیٹی کے ارکان کے پاس تجویز پر اعتراض جتانے کے لئے 10 کام کے دن کا وقت تھا۔یہ مدت بدھ کو (نیویارک کے) مقامی وقت دوپہر تین بجے (ہندوستان وقت کے مطابق جمعرات رات ساڑھے 12 بجے) ختم ہونی تھی۔

اقوام متحدہ میں ایک سفارت کار نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ میعاد ختم ہونے سے ٹھیک پہلے چین نے تجویز پر ‘تکنیکی روک‘ لگا دی۔

سفارت کار نے کہا کہ چین نے تجویز کی جانچ کرنے کے لئے اور وقت مانگا ہے۔یہ تکنیکی روک چھ ماہ کے لئے ہے اور اسے آگے تین ماہ کے لئے توسیع کی جاسکتی ہے۔

اس واقعات پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے نئی دہلی میں وزارت خارجہ نے اس پر (واقعات پر) مایوسی ظاہر کی۔ وزارت نے کہا، ’ ہم مایوس ہیں، لیکن ہم تمام دستیاب اختیارات پر کام کرتے رہیں گے، تاکہ اس بات کو یقین کیا جا سکے کہ ہندوستانی شہریوں پر ہوئے حملوں میں ملوث دہشت گردوں کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔‘

وزارت نے کہا کہ ہم پیشکش لانے والے اراکین قوموں کی کوشش کے لئے شکر گزار ہیں۔ ساتھ میں سلامتی کونسل کے دیگر ارکان اور غیر ارکان کے بھی شکر گزار ہیں جنہوں نے اس کوشش میں ساتھ دیا۔

وزارت نے چین کا نام لئے بغیر کہا کہ کمیٹی مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے والے پیشکش پر کوئی فیصلہ نہیں کر سکی کیونکہ ایک رکن ملک نے تجویز روک دیا۔ گزشتہ 10 سال میں اقوام متحدہ میں مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کی یہ چوتھی تجویز تھی۔

کمیٹی اتفاق رائے سے فیصلہ کرتی ہے

اقوام متحدہ میں مقرر ہندوستان کے سفیر اور مستقل نمائندے سید اکبرالدین نے ایک ٹویٹ میں کہا،’ ’بڑے، چھوٹے اور کئی ….. 1 بڑے ملک نے روک دیا، پھر سے….. 1 چھوٹا سگنل @ دہشت گردی کے خلاف اقوام متحدہ۔کئی ممالک کا شکریہ ادا ۔ بڑے اور چھوٹے ۔ جو بے مثال تعداد میں اس قواعد میں شامل ہوئے۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ ساری نظریں چین پر تھی کیونکہ وہ پہلے بھی اقوام متحدہ کی طرف سے مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کی ہندوستانی کی کوششوں میں رکاوٹ اٹکا چکا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *