کانگریس میں جاری موجودہ بحران کے درمیان راہل گاندھی اس بات پر اڑے ہوئے ہیں کہ ان کے خاندان کا کوئی بھی رکن پارٹی کا ایگزیکٹو چیئرمین نہیں بنے گا، جبکہ ان کی بہن پرینکا گاندھی کو صدر بنانے کی مانگ نے زور پکڑ لیا ہے۔
نئی دہلی: کانگریس میں جاری موجودہ بحران کے درمیان راہل گاندھی اس بات پر اڑے ہوئے ہیں کہ ان کے خاندان کا کوئی بھی رکن پارٹی کا ایگزیکٹو چیئرمین نہیں بنے گا، جبکہ ان کی بہن پرینکا گاندھی کو صدر بنانے کی مانگ نے زور پکڑ لیا ہے۔ پارٹی کے بزرگ رہنماؤں اور نوجوان رہنماؤں کے درمیان جاری زور آزمائی کے درمیان کانگریس قیادت سے بغیر رہتا ہے۔پارٹی کے بزرگ رہنما پرینکا گاندھی کو صدر بنائے جانے کے حق میں مضبوطی سے کھڑے ہیں، جبکہ نوجوان رہنماؤں کا ایک طبقہ راہل گاندھی کی منصوبہ بندی کی حمایت کر رہا ہے۔ راہل بھلے ہی خاندان کے رکن کو صدر بنائے جانے کے خلاف ہیں،لیکن پرینکا کے سون بھدر شو نے پارٹی اور پارٹی سے باہر بہت سے لوگوں کے دل جیت لیے ہیں۔ سونیا گاندھی کے ارد گرد رہنے والوں کا خیال ہے کہ اتر پردیش میں پرینکا کی مداخلت کے بعد انہیں ایک فاتح مل گیا ہے۔ لیکن راہل کو یہ قابل قبول نہیں ہے۔
Image result for rahul gandhi
پنجاب کے وزیر اعلی امریندر سنگھ اور تروندپورم کے ایم پی ششی تھرور ان رہنماؤں میں شامل ہیں، جنہوں نے پرینکا کی حمایت کی ہے۔ امریندر سنگھ نے پیر کو کہا کہ پرینکا گاندھی بالکل مناسب انتخاب ہوں گی، لیکن فیصلہ کانگریس مجلس عاملہ کو لینا ہے۔ انہوں نے کہا، ‘پرینکا اگلے صدر کے لئے ایک بہترین انتخاب ہیں،جنہیں تمام کی حمایت مل جائے گا۔ ششی تھرور سے متفق ہوں کہ ان کا قدرتی کرشمہ کارکنوں اور ووٹروں کو یکساں طور پر حوصلہ افزائی کرے گا۔ امید ہے سی ڈبلیو سی اس پر جلد فیصلہ کرے گا۔
Image result for malik arjun kharge
پرینکا گاندھی اتر پردیش کی بی جے پی حکومت کے خلاف مکمل طور سرگرم ہیں۔ وہ ہر روز وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف حملے بول رہی ہیں۔ کئی لیڈروں کے مطابق، ایگزیکٹو چیئرمین کی تقرری میں تاخیر سے پارٹی کا نقصان ہو رہا ہے، جو فی الحال صدر مبرا ہے۔لیڈر نہ ہونے سے لوگوں کے ذہنوں میں شک پیدا ہوا ہے اور ہائی کمان سے ریاست قیادت کو واضح ہدایات نہ ملنے کی وجہ سے ہی کانگریس ایک اہم جنوبی ریاست کرناٹک کو گنوا بیٹھی ہے۔
Image result for sachin pilot and jyotiraditya
لیکن وہ لوگ جو گاندھی خاندان کے کسی رکن کو ایگزیکٹو چیئرمین نہ بنائے جانے کے رخ کی حمایت کر رہے ہیں، ان کا خیال ہے کہ پارٹی کو راہل گاندھی کے رخ کی حمایت کرنی چاہیے۔ رہنماؤں کا یہ خیمہ مانتا ہے کہ راجستھان کے نائب وزیر اعلی سچن پائلٹ اور مدھیہ پردیش کے لیڈر جیوتی رادتیہ سندھیا موجودہ حالات میں پارٹی کو قیادت دینے کے صحیح انتخاب ہیں۔ملک ارجن کھڑگے کو ایک معاہدے کے طور پر ایگزیکٹو چیئرمین بنایا جا سکتا ہے اور پائلٹ اور سندھیا دو نائب صدر ہو سکتے ہیں۔ لیکن راہل کو یہ فارمولہ بھی قبول نہیں ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here