دہلی آتشزدگی: فیکٹری کا مالک اور اس کا بھائی گرفتار

 

دہلی کے رانی جھانسی روڈ پر واقع جس فیکٹری میں بھیانک آگ لگی تھی، اس کے مالک ریحان کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ بیگ فیکٹری میں لگی آگ سے کم از کم 43 لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔ وہیں کئی دوسرے افراد شدید زخمی بتائے جا رہے ہیں۔ پولیس نے فیکٹری کے مالک کے بھائی کو بھی حراست میں لیا ہے۔ ساتھ ہی فیکٹری کے مالک کے کچھ رشتہ داروں سے بھی پولیس پوچھ گچھ کر رہی ہے۔

Image result for Delhi fire: factory owner and his brother arrested
دراصل دہلی کے رانی جھانسی روڈ مارکیٹ واقع ایک فیکٹری میں اتوار کی صبح ساڑھے چار اور پانچ بجے کے آس پاس آگ لگ گئی تھی۔ آتشزدگی میں ہلاک ہونے والے افراد مزدور ہیں، جس وقت فیکٹری میں آگ لگی، اس وقت فیکٹری کے گیٹ کو باہر سے بند کر دیا گیا تھا۔ اندر مزدور باہر آنے کے لئے فریاد کرتے رہے ، مقامی لوگوں کی مدد سے گیٹ توڑکر کچھ لوگوں کو باہر نکالا گیا۔ پھر فائربریگیڈ محکمہ کی 30 سے زیادہ گاڑیاں جائے حادثہ پر پہنچیں۔آگ لگنے کی وجہ شارٹ سرکٹ بتائی جا رہی ہے۔ اس عمارت میں کسی بھی طرح کے سیکورٹی ریگولیٹرز کا دھیان نہیں رکھا گیا تھا، نہ ہی بلڈنگ کے مالک نے این او سی کے لئے فائر بگریڈ کی کلیئرنس لی تھی، ساتھ ہی ایم سی ڈی کو بھی اس کی اطلاع نہیں تھی۔

Image result for Delhi fire: factory owner and his brother arrested
واقعہ کے بارے میںفائربریگیڈ محکمہ کے افسر نے بتایا کہ جن لوگوں کو بچایا گیا، ان میں زیادہ تر بیہوشی کی حالت میں تھے، کچھ زخمی بھی تھے۔ 500-600 گز کے فلور ایریا میں یہ فیکٹری چل رہی تھی جس میں گراؤنڈ سے اوپر چار منزلہ عمارت تھی۔ اس میں کئی طرح کی فیکٹریاں چلتی تھیں، بلڈنگ میں اسکول بیگ بنانے اور پیکنگ کا کام ہوتا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *