دولہا بننے پر دلت کی پٹائی، نصف درجن باراتی بھی زخمی

Share Article

 

کھٹہن گاؤں میں دو درجن سے زائدشرپسندوںنے گھر سے نکل رہی دلت کی بارات پر پیر کی رات حملہ بول دیا۔ گاڑی میں بیٹھا دولہا، اس کے پھوپھا، دو بہنیں، بھتیجی اور تین سالہ بھتیجے کو پیٹ کر زخمی کر دیا۔شرپسندوں نے کار کو بھی نقصان پہنچایا۔ اس واقعہ میں چھ نامزد سمیت دو درجن لوگوں کے خلاف تحریری شکایت کی گئی ہے۔

 

 

علاقائی افسر شاہ گنج اجے شریواستو نے بتایا کہ گاؤں رہائشی اوم پرکاش گوتم کے بیٹے نتیش کی شادی کی بارات اسی تھانہ علاقہ کے بناواڈیہہ گاؤں میں جانے کے لئے شام تقریباً سات بجے گاجے باجے کے ساتھ گھر سے نکلی۔ ایک کلومیٹر آگے بلاک ہیڈکوارٹر پر گاؤں کے ہی اعلیٰ ذات کے دو درجن شرپسند عناصر ایک دلت خاندان کے لوگوں نے لاٹھی ڈنڈے کے دم پر دولہا کی گاڑی کوروک لیا، وہ کچھ سمجھ پاتے کہ شرپسندوں نے انہیں لاٹھی ڈنڈوں سے پیٹنا شروع کر دیا جس کی وجہ سے دولہا سمیت اس کی دو بہنیں شویتا (19)منیشا (21) بھتیجہ آیوش (3) بھتیجی چنکی (5) اور پھوپھا ننھے لال (42) زخمی ہو گئے۔ واقعہ کے پیچھے بتایا جاتا ہے کہ دو دن پہلے نتیش گوتم نے گاؤں کے ایک سوکھے آم کے درخت کی لکڑی توڑ لی تھی جس کو لے کر دونوںگروپوں کے درمیان تنازعہ ہوا تھا اسی معاملے کو لے کر پیر کی رات بارات نکلتے وقت مار پیٹ ہو گئی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *