سی پی آئی ایم ایل اے اور انصاف منچ کے وفد نے اورائی، گائے گھاٹ، کٹرہ کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کیا

Share Article

نتیش کمار کی حکومت کے پاس متاثرین سیلاب کی بحالی کی کوئی منصوبہ بندی موجود نہیں: سداما پرساد

Image result for nitish kumar bihar muzaffarpur floods

مظفرپور (اسلم رحمانی ) ریاست بہار کے کئی اضلاع سمیت مظفرپور میں بھی سیلاب کے نتیجے میں سینکڑوں خاندان بے گھر ہوچکے ہیں بڑی تعداد میں آبادیاں متاثر ہوچکی ہیں جن کی بحالی کیلئے حکومت کے پاس کوئی پروگرام نہیں ان خیالات کا اظہار سی پی آئی ایم ایل آرہ (بھوجپور)کے ممبر اسمبلی سدماپرساد نے مظفرپور کے سیلاب زدہ گائے گھاٹ بلاک کےبری،مدھول،بینی آباد،چندولی،ہرکھولی،مشرولی،ترکٹولیا،بنھگاواں،بلور،بھاگتوتپور،و اورائی بلاک کے بھبن گاواں،بارا،مہوارا،ہرنی

Image result for bihar muzaffarpur floods

ٹولہ،مدھوبن،براخرد،جوکی،و کٹرہ کے ڈمری چچری پل کا طوفانی دورہ کرنے کےبعد کیا مسٹر سداما پرساد کے وفد میں انصاف منچ بہار کے ریاستی نائب صدر آفتاب عالم، اسلم رحمانی، محفوظ الرحمن،شمشیرعالم،منوج یادو،وکش کمار،گائے گھاٹ کے وفد میں انصاف منچ بہار کے ریاستی صدر سورج کمار سنگھ، جیتندر یادو،فہد زماں، مناظر حسن،ظفر اعظم شامل تھے سیلاب زدہ علاقوں کے متاثرین سے ملاقات کرنے کے بعد ممبر اسمبلی نے مذید کہاکہ پورے علاقے میں سہولیات کافقدان ہےعوام کھانے اور پینے کے پانی کیلئے ترس گئے ہیں،متاثرین کے درمیان حکومت کی جانب سے جو انتظامات کرائے گئے ہیں وہ انتہائی ناکافی ہے ۔ فتح باغ اور امپھری واٹر کمپلیکس کھنڈر بن چکے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نتیش کمار کی تبدیلی کا نعرہ محض ایک ڈھونگ ہے علاقے میں جگہ جگہ لوگ بھوکے پیاس سے کھولے آسمان کے نیچے زندگی گزارنےکے لیے مجبور ہے ہوئے ہیں ۔انہیں کوئی پوچھنے والا نہیں،ہے ۔اورائی ،گائے گھاٹ ،کٹرہ کے لوگوں کا گھر ندی میں تبدیل ہوچکا ہے ، روڈ جگہ جگہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں ۔

Image result for bihar muzaffarpur floods

انہوں نے کہا کہ کرپشن کو ختم کرنے کے دعوے کرنے والوں نے سیلاب سے متاثرین درمیان راحتی اشیاءتقسیم اور دیگر کاموں کے تمام ٹھیکے بدعنوان لوگوں کو دیئے گئے ہیں ،یوں بدعنوان ٹھیکیداروں کیلئے حالیہ سیلاب رحمت بن گیاہے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت عوامی مسائل کے حل میں ترجیحات متعین کرے اور بنیادی سہولتوں کی فراہمی کویقینی بنائے۔تفصیلات کے مطابق ریاست بہار کے ضلع مظفرپور کا اورائی،گائے گھاٹ، میناپور، سیلاب سے زبردست متاثر ہے۔ حال یہ ہے کہ پناہ گزینوں کی زندگی جینے والے سیلاب زدگان اب راحت رسانی میں لوٹ مار کر رہے ہیں۔ دانے دانے کو محتاج یہ لوگ غذائی اجناس دیکھ کر ٹوٹ پڑتے ہیں۔سیلاب متاثرین کے درمیان جہاں ایک طرف راحت رسانی کا کام جاری ہے، وہیں سامان کی بھی لوٹ مار جاری ہے۔تاہم یہ بھی حقیقت ہے کہ جہاں علاقے کی عام زندگی متاثر ہے وہیں دوسری جانب اونچے مقامات اور شاہراہوں پر پناہ گزینوں کے درمیان راحت رسانی کا کام اب تک مناسب انداز میں شروع نہیں ہو پایا ہے۔راحت رسانی میں لوٹ مار جوکی باشندہ جنگلی پاسوان ،سترودھن پاسوان،جگدیش سہنی،گنگارام،امیس رائے،راج کماری دیوی،پریم شیلا،بانودیوی، کے مطابق حکومت کے نمائندگان و ضلع انتظامیہ لاکھ راحت رسائی کئے جانے کا دعویٰ کریں مگر زمینی حقیقت کچھ اور ہی ہے۔

 

Image result for bihar muzaffarpur floods

اگر انتظامیہ کی جانب سے پورے انتظامات ہوتے تو یہ تصویریں آپ کے سامنے نہیں آتیں جو ایک پناہ گزیں کیمپ کی ہے۔ جہاں لوگ کھانے کے سامان کے لئے لوٹ مار کر رہے ہیں۔ سیلاب زدہ لوگوں کے پاس اب تک ضلع انتظامیہ کی جانب سے کوئی بھی مدد نہیں پہنچی ہے اور نہ کوئی سرکاری و غیر سرکاری تنظیم یہاں راحت کا سامان لے کر پہنچی ہے۔

Image result for bihar muzaffarpur floods

یہ تمام افراد ایک وقت کے لیے دانے دانے کے لیے محتاج ہے میں ابھی تک گاؤں میں ضلع انتظامیہ کی جانب سے کوئی مدد کو نہیں پہنچا، چھوٹے چھوٹے بچے کھانے کو محتاج ہیں، ایسے میں کچھ بھی سامنے نظر آتا ہے تو لوگ دوڑ پڑتے ہیں۔کئی دنوں سے یہ لوگ ایک ایک دانے کو محتاج ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *