گایوں کی موت کا معاملہ: یوپی وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے سخت تیور، 8 اہلکار ہوئے معطل

Share Article

اتر پردیش: وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے مختلف اضلاع میں ہوئی بہت گایوں کی موت پر سخت تیور دکھائے ہیں۔ انہوں نے دیر رات مرزا کے اہم ویٹرنری آفیسر، ایودھیا کے بی ڈی او سمیت دونوں اضلاع کے آٹھ افسروں اور ملازمین کو معطل کر دیا ہے۔ ایودھیا کے ضلع مجسٹریٹ اور چیف میڈیکل افسر اور مرزا پور کے ڈی ایم کو نوٹس دے کر جواب مانگا گیا ہے۔ ساتھ ہی، مرزا پور میں گوؤں کی موت کے معاملے کی جانچ کی ذمہ داری کمشنر ودھياچل کو سونپی گئی ہے۔

یوگی کے سخت موقف کے بعد ملكي پور (ایودھیا) کے بی ڈی او اور نائب میڈیکل آفیسر، پليامافي کی گرام پنچایت افسر، ایودھیا میونسپل کانجی ہاؤس انچارج ڈاکٹر اوپیندر کمار اور ڈاکٹر وجیندر کمار کو معطل کر دیا گیا۔ وہیں، مرزا پور میں اہم ویٹرنری آفیسر ڈاکٹر اے کے سنگھ، میونسپل کے انچارج ادھیشاشي افسر مکیش کمار اور شہر انجینئر رام جی اپادھیائے کو بھی معطل کر دیا گیا۔
وزیر اعلی نے پرياگراج اور مرزپور کے کمشنر سے گایوں کی موت کی وجوہات کی تحقیقات کر قصورواروں پر کارروائی کرنے کی ہدایات دی ہیں۔

وزیر اعلی نے حال ہی میں ایودھیا، ہردوئی، رائے بریلی، مرزاپور، پرياگراج اور سیتاپور سمیت کئی اضلاع میں گایوں کی موت پر تمام ڈی ایم کے ساتھ ویڈیو کانفرنسنگ کر یہ کارروائی کی۔ وزیر اعلی نے خبردار کیا ہے کہ لاپرواہ لوگوں پر اور جانوروں کے ظلم کا سراغ لگانا کے تحت کارروائی ہوگی۔

وزیر اعلی نے گوشالاؤں میں مناسب انتظام نہ ہونے کی وجہ حکام کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گوشالا کے آپریشن، معائنہ اور دیکھ بھال کی ذمہ داری ڈی ایم اور سی ڈی او کی ہوگی۔ یوگی نے تمام اضلاع کے ڈی ایم سے کہا ہے کہ وہ گوشالاؤں کا معائنہ کر نظام کو درست کریں۔جو گئو پالک دودھ نکال کر جانوروں کو سڑکوں پر چھوڑ دیتے ہیں، ان کے خلاف جرمانے کی کارروائی ہوگی۔ وہیں بے سہارا گئو رکھنے پر گئو پالكو کو 900 روپے ماہانہ دیئے جائیں گے۔

اس کے ساتھ ہی انہوں نے رائے بریلی اور ہردوئی کے ڈی ایم کو قانونی کارروائی کرنے کی ہدایات دی ہیں۔ تمام اضلاع کے ڈی ایم سے کہا ہے کہ وہ گوشالاؤں کا معائنہ کر نظام درست کریں۔ غور طلب ہے کہ گزشتہ چند دنوں میں بارہ بنکی، رائے بریلی، ہردوئی، جونپور، اعظم گڑھ، سلطان پور، سیتاپور، بلرام پور اور پرياگراج میں گوشالاو میں بد نظمی کے سبب بہت سے گایوں کی موت ہو گئی تھی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *