چندریان سے رابطہ ٹوٹا ہے حوصلہ نہیں، چاند کو چھونے کا ہمارا عزم مزید مضبوط ہوا: وزیر اعظم

Share Article

 

بنگلور، چندریان -2′ کے لینڈر’وکرم‘ کا جمعہ کی رات چاند پر اترتے وقت زمینی اسٹیشن سے رابطہ ٹوٹ گیا۔ رابطہ اس وقت ٹوٹا جب لینڈر چاند کی سطح سے محض 2.1 کلومیٹر کی اونچائی پر تھا۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے متعلقہ واقعہ کے پیش نظر ہفتے کی صبح قوم کو خطاب کیا۔انہوں نے کہا کہ آپ وہ لوگ ہیں جو مادر وطن اور اس کی جیت کے لئے جیتے ہیں۔ آپ وہ لوگ ہیں جو وطن کے لئے جوجھتے ہیں۔ آپ وہ لوگ ہیں جو وطن کے لئے جذبہ رکھتے ہیں۔وطن کا سر بلند ہو، اس کے لئے پوری زندگی ختم کردیتے ہیں ۔ انہوں نے کہا’ ساتھیوں میں کل رات کو آپ کی ذہنیت کو سمجھ رہا تھا۔ آپ کی آنکھیں بہت کچھ کہہ رہی تھیں۔ آپ کے چہرے کی اداسی میں پڑھ رہا تھا، اس لئے میں زیادہ دیر آپ کے درمیان نہیں رکا۔ کئی راتوں سے آپ سوئے نہیں ہیں، پھر بھی میرا دل کر رہا تھا کہ ایک بار صبح پھر سے آپ کو بلاؤں آپ سے باتیں کروں‘۔

پی ایم مودی نے مزید کہا کہ اس مشن کے ساتھ منسلک ہر شخص ایک الگ ہی حالت میں تھا۔ بہت سے سوال تھے اور بڑی کامیابی کے ساتھ آگے بڑھتے ہیں اور اچانک سب کچھ نظر آنا بند ہو جائے۔ میں نے بھی اس لمحے کو آپ کے ساتھگزارا ہے جب رابطہ منقطع ہوا اور آپ سب ہل گئے تھے۔ میں دیکھ رہا تھا اسے۔ ذہن میں قدرتی سوال تھا کیوں ہوا کیسے ہوا۔ بہت سی امیدیں تھیں۔ میں دیکھ رہا تھا کہ آپ کو اس کے بعد بھی لگ رہا تھا کہ کچھ تو ہو گا کیونکہ اس کے پیچھے آپ کی محنت تھی۔ پل پل آپ نے اس کو بڑی ذمہ داری سے بڑھا یا تھا۔ ساتھیوں آج بھلے ہی کچھ رکاوٹیں ہاتھ لگی ہوں لیکن اس سے ہمارا حوصلہ کمزور نہیں پڑا ہے، بلکہ اور مضبوط ہوا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا’ہمیں اپنے راستے کے آخری قدم پر بھلے رکاوٹ ملی ہو لیکن ہم منزل کے راستے سے ڈگمگائے نہیں۔ آج بھلے ہی ہم اپنی منصوبہ بندی سے چاند پر نہیں پہنچ پائے لیکن کسی شاعر کو آج کے واقعہ پر لکھنا ہوگاگے تو وہ لکھے گا کہہم نے چاند کا اتنا رومانوی ذکر کیا کہ چندریان کے مزاج میں بھی وہ آ گیا۔ لہٰذا آخری مرحلے میں چندریان 2 چاند کو گلے لگانے کے لئے دوڑ پڑا۔ آج چاند کو چھونے کی ہماری خواہش طاقت، عزم مزید مضبوط ہوئی ہے۔ گزشتہ کچھ گھنٹے سے پورا ملک جاگا ہوا ہے۔ ہم اپنے سائنسدانوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور رہیں گے۔ ہم بہت قریب تھے لیکن ہمیں آنے والے وقت میں مزید فاصلے طے کرنے ہیں۔سبھی ہندوستانی آج خود پر فخر محسوس کر رہا ہے۔ ہمیں اپنے خلائی پروگرام اور سائنسدانوں پر فخر ہے‘۔

پی ایم مودی نے کہا’اس وقت ہمیں مکمل یقین ہے کہ جب ہمارے خلائی پروگرام کی بات ہوگی تو ابھی بہت کچھ ہونا باقی ہے۔ہم بہت سی مزید نئی اونچائی آنے والے دنوں میں چچھوئیں گے۔ میں اپنے سائنسدانوں کو کہنا چاہتا ہوں کہہندوستان آپ کے ساتھ ہے اور ہمیشہ رہے گا۔ آپ کمال کیپیشہ ورہیں، جنہوں نے لاجواب کردار ادا کیا ہے ملک کی ترقی میں۔ کامیابی کے راستے میں ایسی رکاوٹیں کھڑی آتی ہیں لیکن ہمیں اس سے آگے بڑھنے اور مجھے آپ کی صلاحیتوں پر بھروسہ ہے۔ آپ لوگ مکھن پر لکیر بنانے والے نہیں پتھر پر لکیر بنانے والے لوگ ہیں۔ اس مشن کے بعد چاند کو چھونے کی قوت ارادی میں اضافہ ہوا ہے‘۔

وزیر اعظم نے کہا’میں سبھی سائنسدانوں کے خاندان کے لوگوں کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں۔ وہ اگر اپنی حمایت ہمارے سائنسدانوں کو نہیں دیتے تو یہ ممکن نہ ہو پاتا۔ ہم خلا کی دنیا میں اگر مختلف مقام حاصل کر پا رہے ہیں تو اس میں سائنسدانوں کے خاندان کا بھی بڑا حصہ ہے. ہم اگر اپنے سفر کو دیکھیں تو ہمیں بہت اطمینان ہوگا‘۔

وزیر اعظم نے کہا’ساتھیوں نتائج سے مایوس ہوئے بغیر مسلسل مقصد کی طرف بڑھنے کی روایت بھی رہی ہے۔ ساتھیوں نتائج اپنی جگہ ہے لیکن مجھے اور پورے ملک کو اپنے سائنسدانوں،انجینئرز کی کوششوں پر فخر ہے۔ میں نے آپ سے رات میں بھی کہا تھا پھر کہہ رہا ہوں کہ میں آپ کے ساتھ ہوں۔ ملک بھی آپ کے ساتھ ہے۔ ساتھیوں ہر مشکل ہر جدوجہد ہمیں کچھ نیا سکھا کر جاتی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *