بنگال میں تشدد کے خدشہ کے پیش نظر مرکزی فورسز کی200کمپنی کی تعیناتی کا فیصلہ

Share Article

central-forces

کولکاتہ: مغربی بنگال میں انتخابات کے بعد ممکنہ تشدد کے پیش نظر مرکزی فورسز کی200کمپنی کی تعیناتی کی گئی ہے۔ منگل کو یہ جانکاری خصوصی پولیس سپروائزروویک دوبے نے دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ الیکشن کمیشن نے شمالی کولکاتہ کے ایک پولنگ بوتھ پر ہوئی ووٹنگ کو منسوخ کر دیا ہے۔ نتائج کے آنے سے پہلے آئندہ 22 مئی کو اس پولنگ بوتھ پر دوسرے مرحلہ کی ووٹنگ ہوگی۔ وہیں ووٹوں کی گنتی کے دوران امن و امان برقرار رکھنے کے لئے یہاں بڑی تعداد میں مرکزی فورسز کی 200 کمپنیاں تعینات کرنے کے احکامات جاری کئے جا چکے ہیں۔وویک دوبے نے ووٹنگ کے بعد ہونے والی ووٹوں کی گنتی میں ممکنہ تشدد سے نمٹنے کے لئے مرکزی فورس تعینات کئے ہیں۔دوبے نے بتایا کہ مغربی بنگال میں آخری مرحلے کی پولنگ کے دوران 710 کمپنی مرکزی فورسز کی تعیناتی ہوئی تھی۔ ان میں سے 510 کمپنیوں کو ریاست سے باہر بھیج دیا گیا ہے۔ باقی 200 کمپنیوں کو ریاست بھر میں تعینات کیا گیا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ مغربی بنگال میں تشدد کے حالات کی وجہ سے آخری مرحلے کے انتخابات کے دوران تشہیر ملک بھر کے باقی ریاستوں کے مقابلے میں 20 گھنٹے پہلے ہی روک دیا گیا تھا۔ بھاٹاپاڑا اسمبلی حلقہ میں ووٹنگ ہونے کے بعد سے مسلسل تشدد کا دور جاری ہے جومنگل کو اپنے عروج پر پہنچ گیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *