لوک سبھا انتخابات میں شکست کے بعد پردیش کانگریس میں تبدیلی کا مطالبہ تیز ہوتا جا رہا ہے۔ پارٹی کے کئی لیڈر اس سلسلے میں بیان دے چکے ہیں۔ اسی سلسلے میں اب راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ وویک تنکھا نے پیر کو ٹویٹ کر کانگریس کی سیاست میں ہنگامہ برپا کر دیا ہے۔ انہوں نے مختصر الفاظ میں پارٹی کے اندر ’سرجری’ کا مطالبہ کیا ہے۔
 
لوک سبھا انتخابات میں شکست کے بعد وزیر اعلی اور ریاستی کانگریس صدر کمل ناتھ نے تمام بڑے لیڈروں کے ساتھ ملاقات کی تھی۔ اس میٹنگ میں شکست کی وجوہات پر بحث کی گئی اور دیگر مسائل کا بھی جائزہ لیا گیا۔میٹنگ سے پہلے یہ مانا جا رہا تھا کہ اس میں نئے ریاستی صدر کو لے کر بھی فیصلہ ہو سکتا ہے، لیکن ایسا کچھ نہیں ہوا۔ پارٹی کے اندر اٹھ رہی قیادت کی تبدیلی کی مانگ کے درمیان کانگریس لیڈر اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ وویک تنکھا نے ٹویٹ کرکے سیاست کو گرم کر دیا ہے۔ انہوں نے کانگریس کی ایک جائزہ میٹنگ کی ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے “ایم پی کانگریس کی لوک سبھا انتخابات کے بعد کل جائزہ میٹنگ منعقد ہوئی۔ کارکن اور عوام میں مطالبہ ہے سرجری کا۔ ملک کے مفاد میں کانگریس کو مضبوط کریں ۔
 
قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ اور جبل پور سیٹ سے کانگریس کے ٹکٹ پر انتخابات ہارے وویک تنکھا کے بیٹے ورون تنکھا نے بھی ٹویٹ کر کانگریس میں سنگین تبدیلی کی ضرورت بتائی تھی۔ انہوں نے لکھا تھا، “موجودہ سیاست میں رہنا ہے تو قیادت میں تبدیلی کی جانی چاہئے۔ کانگریس میں بڑی تبدیلی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے تو یہ تک لکھ دیا تھا کہ ” مودی حکومت کی اکثریت اور ای وی ایم پر سوال نہ اٹھائیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here