بچوں کو بھی روزہ رکھنے کے لئے حوصلہ افزائی کرنی چاہئے : عارف قاسمی

Share Article

 

رحمتوں اور برکتوں کے نام سے پکارے جانے والے ماہ رمضان المبارک میں ماں باپ کو اپنے بچوں کے روزے رکھنے پر بھی خصوصی توجہ دینا چاہئے، بچوںکو شروع سے ہی روزہ رکھنے کی عادت ڈالنی چاہئے۔فتاویٰ دارالعلوم کے مطابق ماں باپ کو چاہئے کہ وہ بچوں کو شروع سے ہی روزا رکھنے کی عادت ڈالیں، کیونکہ فرض ہونے کے بعد روزہ رکھنے شروع کرنے والے بچے کو روزہ رکھنے کی عادت مشکل سے پڑتی ہے،روزہ کی مثال بھی نماز جیسی ہے، اگر بچہ سات سال کا ہو جائے تو اسے روزے کے لئے کہا جائے گا اور دس سال کا ہو جائے تو اسے سمجھابجھا کر روزہ رکھوایا جائے گا۔

 

احسان الفتاویٰ کے مطابق اگر کوئی بچہ رمضان کے دنوں میں بالغ ہو جائے اور وہ روزے سے نہیں تھا تو اسے چاہئے کہ وہ دن کے باقی حصے میں کھانا پینا چھوڑ دے اور روزہ دار کی طرح رہے۔ نابالغ بچہ اگر روزہ توڑ دیتاتے اس کی قضا ضروری نہیں ہے۔ دارالعلوم وقف دیوبند کے سینئر استاد مفتی عارف قاسمی نے بتایا کہ جب بچہ سات سال کی عمر کا ہو جائے تو اسے روزہ رکھنے کے لئے کہنا چاہئے اگر اس میں ہمت ہے تو کچھ ایک روزے وہ بالغ ہونے تک رکھے، جس سے اسے روزہ فرض ہونے کی صورت میں عادت رہے وہ روزہ رکھ سکے۔مفتی عارف قاسمی نے بتایا نابالغ بچوں سے زبردستی روزہ نہیں رکھوانے چاہئے بلکہ ان کی مرضی سے روزہ رکھوانے چاہئے،جس سے انہیں روزہ رکھنے کی عادت بن سکے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *