چھتیس گڑھ: وزیر اعلیٰ بگھیل کا جوگی کی ماں پر قابل اعتراض بیان، مچا ہنگامہ

Share Article

 

چھتیس گڑھ کے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل پر امت جوگیکے ذریعہ عائد کئے گئے الزام کے بعد کے بھوپیش بگھیل کی طرف سے کئے گئے نازیبا تبصرے سے سیاسی ماحول گرما گیا ہے۔ جوگی کے الزام پر وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل نے جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ ہونے کے ناطے مجھ سے کئی لوگ ملتے ہیں۔ ان (امت جوگی) کی ماں بھی مجھ سے ملی تھیں۔ امت جوگی یہ پوچھ لیں کہ ان کی ماں سے میری کیا بات ہوئی ،یہ عوامی کرنا ہے یا نہیں۔ وزیر اعلیٰ کے اس ذاتی قابل اعتراض بیان کے بعد امت جوگی نے بگھیل کے اس بیان کی مذمت کرتے ہوئے اسے ایک عورت کی توہین بتایا ہے۔

 

اس سے پہلے اتوارکے روز ایک انکشاف میں جنتا کانگریس چھتیس گڑھ (جے) کے ریاستی صدر امت جوگی نے وزیر اعلیٰ بگھیل پر الزام عائد کیا تھا کہ دہلی میں انہوں نے اڈانی کمپنی کے مالکان حکام جس میں اڈانی کمپنی کے منیجنگ ڈائریکٹر اور گوتم اڈانی کے بھائی راجیش گوتم سے خفیہملاقات کر چھتیس گڑھ میں کئی کانوں کا ٹھیکہ اڈانی انٹرپرائزز لمیٹڈ کو فروخت کر دیا ہے۔ امت جوگی کے الزام کے مطابق، وزیر اعلیٰ نے 14 جون کو شام 6 سے 8 بجے تک بند کمرے میں راجیش اڈانی، ونے پاکاش گوئل اور ویبھیو السی سے ملاقات کی تھی ، لیکن اس ملاقات کا انکشاف نہیں کیا گیا ہے۔

 

وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل کے بیان کے بعد امت جوگی نے وزیر اعلیٰ بگھیل کے بیان کو فحش، غیر معیاری اور چھتیس گڑھ کی تمام ماؤں کی توہین قرار دیتے ہوئے سخت رد عمل کا اظہار کیا ۔ ساتھ ہی جوگی جونیئر نے پیر کے روز ٹویٹ کر وزیر اعلیٰ بگھیل پر ایک بار پھر حملہ بولا۔ جوگی نے سوال پوچھتے ہوئے لکھا ہے، ‘نروا گروا گھروااوا باری کے بہانے چھتیس گڑھ کو اڈانی گڑھ بنانے کی سودے بازی کر چکے وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل میرے دو سوالات کا براہ راست جواب دیں کہ کیا انہوں نے اڈانی گروپ کے مالکان سے 14 جون 2019 کو 6 سے 8 بجے شام کو چھتیس گڑھ سدن کے بند کمرے میں ڈیپازٹ -13، گارے پالما -2، گدھ مری ، پٹوریا اور چوٹیا کانوں کا ایم ڈی او- مائننگ معاہدوں کا سودا کیا ہے یا نہیں۔ انہوں نے لکھا ہے کہ اس کا جواب صرف میں نہیں پوراچھتیس گڑھ جاننا چاہتا ہے۔

 

ساتھ ہی جوگی نے اپنی ماں رینو جوگی پر وزیر اعلیٰ بھوپیش بگھیل کے بیان کو قابل اعتراض قرار دیتے ہوئے کہا کہ میری ماں ڈاکٹر رینو جوگی نے بند کمرے میں بھوپیش بگھیل سے کیا ملاقات ہوئی۔ اس کا بھی انکشاف کرکے نہ صرف ان کا بیٹا ہونے کی وجہ سے میرا ذاتی تجسس ختم کریں، بلکہ جو انہوں نے بالواسطہ طور پر سینئر خاتوں ممبر اسمبلی کی کردار کشی کی گھناؤنی کوشش کی اور مجھ سے اپنی بھڑاس نکالنے کی کوشش کی ہے، اس کے لئے عوامی طور پر معافی بھی مانگیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *