سب مرے چاہنے والے ہیں مرا کوئی نہیں

وسیم راشد
ہفتہ روزہ اخبار کی پریشانی یہ ہے کہ وہ موضوع جس پر آپ بڑے جوش و خروش سے قلم اٹھاتے ہیں، وہ روزنامہ کے مقابلے پرانا ہوجاتا ہے۔ مگر کچھ موضوعات ایسے ہوتے ہیں، جن پر بے اختیار لکھنے کو دل چاہتا ہے۔ 3خبریں یہ کالم لکھتے وقت میری آنکھوں کے سامنے ہیں۔ اتفاق کی بات تینوں ہی اردو زبان و ادب کے فروغ سے متعلق ہیں، جس میں ایک خبر یہ ہے کہ قومی اردو کونسل کی سالانہ اراکین کی کانفرنس میں مرکزی وزیر برائے فروغ انسانی وسائل کپل سبل صاحب نے اردو کے فروغ کے لیے ایک نئے روڈ میپ کا اعلان کیا ہے

Read more

اے نئے سال بتا، تجھ میں نیا پن کیا ہے؟

وسیم راشد
یہ کیا ہوگیا میرے قلم کو کہ نیا ’سال مبارک‘ لکھتے ہوئے ہاتھ تو میرا کانپ ہی رہا تھا۔ قلم بھی ساتھ چھوڑ گیا۔ جی ہاں! کئی بار کوشش کی مگر نیا سال مبارک لکھنے میں اس بال پین کی شاید ریفل ختم ہوگئی، لیکن مجھے ایسا محسوس ہوا کہ 2010بے تحاشہ پریشانیوں اور دکھوں کا سال رہا۔ حکومت کے لیے بھی اور عوام کے لیے بھی، تو شاید قلم بھی ہمارے سیاست دانوں کی طرح ہٹ دھرم ہوگیا کہ جو الفاظ نہیں چاہتا انہیں لکھنے میں ڈھیٹ بن جاتا ہے۔ نیا سال جی ہاں! صرف ہندسوں میں نیا صرف ایک ہندسہ بدلنا ہے اور پوری دنیا میں سال نو

Read more

جی! یہ آپ ہی کے چنے ہوئے نمائندے ہیں

وسیم راشد
یہ لیجیے پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کے بعد اب رسوئی گیس کی باری ہے۔ جی ہاں! آپ کا چولہا جلے نہ جلے آپ کو لہسن 150روپے کلو اور پیاز 60روپے کلو ملے۔ آپ کے گھر ایک وقت ہی کھانا پکے، مگر حلق تک بھرے ہوئے یہ گھوٹالہ باز اسی طرح آزادانہ پھرتے رہیںگے۔ آدرش گھوٹالہ سامنے آیا، سبھی تفصیلات سامنے آگئیں، مگر چوان صاحب ابھی تک دندناتے پھر رہے ہیں۔ 2جی اسپیکٹرم گھوٹالہ جی ہاں! ہندوستان کی تاریخ کا گھوٹالوں کا راجا اور اس کا گھوٹالہ باز بھی کسی راجا سے کم نہیں۔ وہ بھی اے راجا ہے۔ یعنی جیسا نام ویسا کام

Read more

اب اور کیا بگڑے گا اس ملک کا ؟

وسیم راشد
مجھے یہ سب مت بتائیے الٰہ آباد ہائی کورٹ سے میرا اور میرے خاندان کا سو سال سے تعلق ہے۔ لوگوں کو معلوم ہے کہ کون ایماندار ہے اور کون بے ایمان۔ اگر کل مارکنڈے کاٹجو رشوت لینا شروع کرے گا تو پورے ملک کو اس کی خبر ہوجائے گی۔‘‘
یہ غصہ بھرا بیان ہے جسٹس کاٹجو کا۔ جسٹس کاٹجو کون ہیں؟ جسٹس کاٹجو کوئی معمولی نام نہیں ہے۔ جسٹس کاٹجو مرحوم جسٹس ایس این کاٹجو جو کہ الٰہ آباد ہائی کورٹ

Read more

وکی لیکس کے کچھ انکشافات درست تو کچھ گمراہ کن

وسیم راشد
وکی لیکس نے دنیا بھر کے حوالے سے بے شمار انکشافات کیے ہیں۔بالخصوص امریکہ کی حقیقی ڈپلومیسی سے اس نے عالمی رہنمائوں کو روشناس کرایا ہے کہ کس طرح امریکہ اپنے سفارتخانوں کے ذریعہ دوست ممالک کی بھی جاسوسی کرتا ہے۔ وکی لیکس تقریباً ڈھائی لاکھ امریکہ کی خفیہ سفارتی دستاویزات کو منظرِ عام پر لایا ہے جن میں سے بیشتر پچھلے تین سال کے عرصے سے تعلق رکھتی ہیں۔ ان خفیہ سفارتی دستاویزات میں سے کچھ دستاویزات رواں سال فروری کی بھی ہیں۔اس ادارے نے ان خفیہ دستاویزات کو قسطوں میں اپنی ویب سائٹ پر

Read more

جتنی بڑی جیت اتنی بڑی ذمہ داری

وسیم راشد
بہار الیکشن، جی ہاں! جب بہار الیکشن کی ہر طرف بہار آئی ہوئی ہے تو ہم کیوں خزاں کی بات کریں حالانکہ اس بہار الیکشن کے نتیجے کے دوران ہی کئی اور اہم گھوٹالے، حادثے اور باتیں ہوئی ہیں جو بہار الیکشن کے نتیجے میں دبی تو نہیں ہیں، مگر پہلے صفحے کی سرخی نہ بن کر دوسرے تیسرے صفحے پر نظر آرہی ہیں۔ گھوٹالے یوں تو کامن ویلتھ گیمز، آدرش ہاؤسنگ سوسائٹی، 2جی اسپیکٹرم گھوٹالہ اور اس سے پہلے تیلگی گھوٹالہ،ستیم گھوٹالہ، بوفورس گھوٹالہ، چارہ گھوٹالہ، حوالہ گھوٹالہ غرضیکہ ایک لمبی فہرست ہے، جس کو گنتے گنتے

Read more

وزیر اعظم جی، ملک بک رہا ہے اب تو خاموشی توڑ دیجئے

وسیم راشد
خدا بھلا کرے ان بڑے بڑے گھوٹالہ کرنے والوں کا۔ کم سے کم ان کی بدولت میڈیا کو چٹ پٹی خبریں تو مل جاتی ہیں، ورنہ وہی مہنگائی، بے روزگاری کی خبریں پڑھتے پڑھتے تو منہ کا مزہ ہی خراب ہوجاتا ہے۔ ہم نے بھی جب اخبار اٹھا کر دیکھا تو پورے صفحہ پر گھوٹالے ہی گھوٹالہ کی خبریں تھیں۔ آدرش گھوٹالہ تھا، جس کی بنا پر ایک ’چوان‘ کی واپسی ہوئی تو دوسرے ’چوان‘ کی آمد ہوئی۔ کامن ویلتھ گھوٹالہ تھا، جس کی وجہ سے کلماڈی اینڈ کمپنی کو بھی آخر کار مستعفی ہونا پڑا۔ کلماڈی جی اور اشوک چوان نے اتنا تو کما کھا لیا ہوگا کہ سات پشتیں اطمینان سے بیٹھ کر کھاسکتی ہوںگی اور گھوٹالوں کا سردار -2جی اسپیکٹرم تو نہ جانے کتنوں کی نسلیں پشتیں سنوار دے گا۔ اے راجہ ہی نہیں بڑے بڑے صحافی برکھا دت،

Read more

آدرش گھوٹالہ، 2جی اسپیکٹرم گھوٹالہ، سدرشن جی سب کو چھوڑئے اوبامہ کے گن گایئے

وسیم راشد
موضوعات کم تھوڑی ہیں لکھنے کے لیے۔‘‘ روزانہ گرما گرم خبریں آرہی ہیں جو چاہے لکھئے جس پر چاہے لکھئے، جو دل میں آئے لکھئے‘‘ یہ الفاظ ہیں ہمارے ایک بہت ہی قریبی دوست اور کرما فرما کے، جن سے ہم نے جب کہا کہ بھئی ہمیں اداریہ لکھنا ہے، دل میں یوں تو بہت کچھ ہے، کچھ شکایتیں، کچھ تکلیفیں، مگر سمجھ میں نہیںآتا کہ کس کا انتخاب کروں تو یہ جواب دیا تھا انہوں نے۔ حقیقتاً شاید ہی کوئی ملک ایسا ہو جس میں 24گھنٹے میں کم سے کم 4-3ایسی چونکا دینے والی خبریں مل جاتی ہیں، جن سے نہ صرف میڈیا پوری طرح کھیلتا رہ

Read more

اردو اخبارات کو جذبات سے نہیں مسائل سے جوڑئے

وسیم راشد
نہ جانے کیوں یہ خواہش پیدا ہوئی کہ دہلی کے اردو اخبارات پر بات کی جائے۔ دہلی میں اس وقت لا تعداد اردو اخبارات نکل رہے ہیں، مگر ان کا معیار کیا ہے وہ کس حد تک مسلمانوں کے مسائل سے جڑے ہوئے ہیں یہ بات بہت اہم ہے۔آج کے اردو اخبارات پر بات کرنے سے قبل ذرادہلی کے اردو اخبارات کی تاریخ اٹھا لی جائے تو بہتر ہوگا۔
اردو صحافت کو چار ادوار میں تقسیم کیاجاتا ہے اور یہ چار ادوار جو نہ صرف پورے ہندوستان کی صحافت کے اہم ستون ہیں، بلکہ دہلی کی صحافتی سرگرمیاں بھی ان سے

Read more