مسلمانوں کے مسائل، نوجوانوں کی گرفتاریاں، بے شمار سوالات مگر جواب کسی کے پاس نہیں

ایک کرم فرما سے مسلمانوںکے مسائل پر لگاتار بات چیت ہوتی رہتی ہے۔ بڑے جانور کی ذبیحہ پر روک لگانے کے لئے مہاراشٹر کے فیصلے پر وہ محترم میری رائے جاننا چاہتے تھے۔ میں نے تلخ لہجہ میں ان سے کہا دیکھئے پھر الجھا دیا مسلمانوں کو ایک نئے مسئلہ میں۔ ارے مسلمانوں کو ان مسائل سے اوپر اٹھنے دو ۔ان کو اب بابری مسجد، گجرات فساد، ہاشم پورہ، ملیانہ سے اوپر اٹھ کر سوچنے دو ان کی نئی نسلوں کو اب صرف اور صرف تعلیم چاہئے، مسلم نوجوانوں کوجامعہ ملیہ، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اقلیتی کردار سے زیادہ ان اداروں میں داخلے لینے اور اپنی علمی و تخلیقی صلاحیتوں کو بڑھانے کی ضرورت ہے۔ بڑے جانوروں کی ذبیحہ ہو یا چھوٹے

Read more

ایک کسان کی خودکشی سبھی پارٹیوں کی چاندی

سیاست ایک گندا کھیل ہے۔پر کیوں؟ہمارے ذہن میں ہمیشہ یہی سوال گونجتا رہا جب تک کہ ہم شعور کی اس حد تک نہیں پہنچ گئے جب تک خود تھوڑے بہت سیاسی دائوں پینچ کھیلنے نہیں آگئے۔لیکن ہماری سیاست میں تو معصومانہ سی ایک خواہش اچھی سی نوکری اور چھوٹے موٹے عہدے تک محدود رہی۔سیاست دانوں کی عقل اور ان کے سیاسی شعور کو ہمارا دماغ کہاں پہنچ سکتا تھا بھلا۔ کیونکہ کوئی ایسا موقع ،کوئی ایسا حادثہ ،کوئی ایسا سانحہ ہمیں یاد نہیں آتا کہ ہمارے سیاست دانوں نے جس کو کیش نہیں کیا ہو۔پھر وہ ایک کسان کی موت پر کیوں خاموش بیٹھتے ۔آخر گجیندر کو کس نے مارا یہ سوال پوچھنا ایک حماقت ہی تو ہے۔

Read more

اردو دشمنی کا نیا طریقۂ کارآپ تو ایسے نہ تھے

اقلیتوں سے کئے گئے تمام وعدوں کو پورا کرنے میں مرکزی حکومت مصروف ہے، یہ بیان اقلیتی امور کی وزیر ڈاکٹر نجمہ ہپت اللہ کا ہے۔ہوسکتاہے نجمہ ہپت اللہ صحیح کہہ رہی ہوں لیکن ہم ان کے اس بیان کو کیسے تسلیم کریں جبکہ اقلیتوں کے ساتھ ان کی مادری زبان کو لے کر ہی ناانصافی کی جارہی ہے۔ ایک ہی دن دو متضاد خبروں پر ہماری نظر پڑتی ہے تو نجمہ ہپت اللہ کے اس بیان میں صرف سیاسی شعبدہ بازی اور و عدے وعید کے سوا کچھ نظر نہیں آتاہے کیونکہ اس دن یہ بھی خبر ملتی ہے کہ نئے داخلہ فارم سے تیسری زبان کا آپشن ختم کردیا گیا ہے۔ ظاہر ہے اس خبر سے اردو والوں کو سخت دھکا لگا ۔مجھے یاد ہے جب میں بحیثیت اردو استاد کے درس و تدریس کے فرائض انجام دیتی

Read more
Page 1 of 2312345...1020...Last »