ایم پی فنڈ کے پیسوں کا کیا ہوا

ترقیات کے کاموں کے لئے آپ کے علاقے کے ممبر پارلیمنٹ کو ہر سال کروڑوں روپے ملتے ہیں، جسے ’’ایم پی مقامی ترقیاتی فنڈ‘‘کہا جاتا ہے۔ اس فنڈ سے آپ کے علاقے میں مختلف ترقیاتی کام کیے جانے کا انتظام ہوتا ہے۔کیا کبھی آپ نے اپنے علاقے میں ایم پی فنڈ سے ہوئے ترقیاتی کام کے بارے میں جاننے کی کوشش کی؟کیا آپ نے کبھی یہ سوال پوچھا کہ آپ کے علاقے میں ایم پی فنڈ سے کتنا

Read more

سرکاری اسپتالوں میں دوانہ ملے

غریبوں کے لئے مہنگا علاج کرا پانا یا مہنگی دوائیاں پانا آسان نہیں ہوتا۔ اس کے لئے سرکار نے سرکاری اسپتالوں اور سرکاری ڈسپنسریوں کا انتظام کیا ہے ،لیکن ملک کی کچھ ریاستوں میں سرکاری اسپتال کا نام لیتے ہی ایک بد حال سی عمارت کی تصویر ذہن میں آجاتی ہے۔ ڈاکٹروں کی لا

Read more

معاملہ زیر التوا ہے، آر ٹی آئی کا استعمال کیجئے

کچھ وقت پہلے بہار کے جمال پورسے آر کے نرالا نے ہمیں خط لکھ کر دو واقعات کے بارے میں بتایا تھا۔ دونوں واقعات نگر پریشد،جمال پور سے متعلق تھے۔ پہلا واقعہ چمپا دیوی کا تھا۔ چمپا دیوی نگر پریشد جمال پور میں صفائی مزدور کے

Read more

پانچ سو لفطوں کی پابندی کیوں

آرٹی آئی قانون شروع سے ہی سرکار اور نوکر شاہوں کے نشانے پر رہا ہے۔ جب بھی انہیں موقع ملتا ہے اس قانون میں کوئی نہ کوئی ترمیم کردی جاتی ہے۔ ظاہر ہے، اس کا مقصد صرف عام آدمی کو اس قانون کے استعمال سے الگ رکھنے کا ہے۔ پچھلے چھہ سالوں میں عام آدمی نے اس قانون کے استعمال سے اپنی طاقت کو قائم کیا ہے۔اس نے یہ ثابت کیا ہے کہ جمہوریت میں عام آدمی کی طاقت سے بڑا کچھ بھی نہیں ہے۔ اقتدار میں بیٹھے لوگوں اور خود کو طاقتور سمجھنے والے نوکر ش

Read more

انفارمیشن کمشنر، سرکار اور آر ٹی آئی

حق اطلاعات قانون (آر ٹی آئی) آزاد ہندوستان میں بنا پہلا ایسا قانون ہے، جسے عام آدمی کے جاننے اور جینے کے حق سے جوڑ کر دیکھا گیا ۔ اس نے عام آدمی کو سوال پوچھنے کی ہمت دی۔ حکومت اور انتظامیہ میں بیٹھے لوگوں کو پہلی بار لگا کہ کوئی ان سے بھی سوال پوچھ سکتا ہے اور یہی بات ان لوگوں کو ٹھیک نہیں لگی۔ اس لئے اس قانون کو عمل میں نہ لانے کی

Read more

درخواست کہاں اور کیسے جمع کریں

تمام سرکاری محکموں میں ایک یا ایک سے زیادہ پبلک انفارمیشن آفیسر کی تقرری کی گئی ہے۔ آپ کو اپنی درخواست انہیں کے پاس جمع کرنی ہے۔ یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ آپ کے ذریعہ مانگی گئی اطلاع محکمے کی مختلف شاخوں سے

Read more